The news is by your side.

Advertisement

کرسمس پریڈ میں‌ شہریوں‌ کو کچل کر مارنے والا گھر سے جھگڑ کر نکلا تھا

وسکونسن: امریکی ریاست وسکونسن کے شہر واکیشا میں کرسمس پریڈ میں لوگوں کو گاڑی سے کچلنے والے شخص کے بارے میں پولیس نے بتایا ہے کہ وہ گھر سے جھگڑ کر نکلا تھا۔

تفصیلات کے مطابق واکیشا پولیس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ گزشتہ روز کرسمس پریڈ میں 4 خواتین اور ایک مرد کو گاڑی سے کچل کر قتل کرنے والے 39 سالہ سیاہ فام شہری ڈیرل بروکس گھر سے جھگڑ کر نکلا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں ہے، تاہم اس کیس میں ڈیرل بروکس کو جان بوجھ کر قتل کے الزامات کا سامنا کرنا ہوگا۔

پولیس کے مطابق اس واقعے میں چار خواتین سمیت 5 افراد ہلاک اور 48 زخمی ہوئے تھے، زخمیوں میں بچے بھی شامل تھے، دائیں بازو کے انتہاپسندوں نے اس واقعے کو نسل پرستی قرار دینے کی کوشش کی تھی۔

کرسمس پریڈ میں شہریوں پر گاڑی چڑھانے کی دل دہلا دینے والی ویڈیو

سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیٹے نے شواہد دیکھے بغیر ہی ٹوئٹ کر دیا تھا کہ لوگوں کو کچلنے والا شخص دہشت گرد ہے۔

دوسری طرف امریکی میڈیا نے انکشاف کیا ہے کہ ڈیرل بروکس نے 2 نومبر کو بھی ایک خاتون کو گاڑی سے کچلا تھا، جس سے وہ شدید زخمی ہو گئی تھی، خاتون نے انکشاف کیا کہ وہ ڈیرل بروکس کے بچے کی ماں ہے۔

اس کیس میں ڈیرل بروکس کو ایک ہزار ڈالرز کے عوض ضمانت پر رہا کیا گیا تھا تاہم وہ گھر سے باہر نہیں سکتا تھا، یعنی کیس کے خاتمے تک انھیں گھر ہی میں رہنا تھا۔

ڈسٹرکٹ اٹارنی کے آفس کی جانب سے تازہ واقعے کے بعد ایک بیان میں کہا گیا کہ بروکس کو آخر کیوں اتنے کم بونڈ پر رہا کیا گیا تھا، یہ بالکل مناسب نہیں تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں