The news is by your side.

Advertisement

خواتین کے ووٹ نہ ڈالنے پر دو حلقوں کے نتائج کالعدم قرار دیئے جانے کا امکان

اسلام آباد : الیکشن کمیشن نے چکوال اور نوشہرہ میں خواتین کے ووٹوں کی انتہائی کم شرح کا نوٹس لے لیا، دونوں حلقوں کے انتخابی نتائج کالعدم قرار دیئے جانے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق ضمنی الیکشن میں چکوال اور نوشہرہ کے حلقوں میں خواتین کے ووٹ کاسٹ نہ کرنے کی شکایات پر الیکشن کمیشن نے نوٹس لے لیا ہے، خواتین کے ووٹ کاسٹ کا ٹرن آؤٹ اگر دس فی صد سے کم ہوا تو الیکشن کے نتائج کالعدم قرار دے دیئے جائیں گے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ چکوال کے حلقہ این اے65میں چار پولنگ اسٹیشنز پر کوئی خاتون نہیں پہنچی تھی۔ پولنگ اسٹیشنز چار سو دو، چار سو چار، چار سو پانچ، اور چار سو چھ میں ایک بھی ووٹ ایسا نہیں تھا جو کسی خاتون نے کاسٹ کیا ہو۔

صوبائی الیکشن کمشنر نے علاقے کا دورہ کیا، انہوں نے انتخابی امیدواروں اور معززین سے ملاقات کی، خواتین ووٹرز کو پولنگ اسٹشن تک لانے کی یقین دہانی کے باوجود ووٹ کاسٹ نہیں ہوئے۔

دوسری جانب پی کے61نوشہرہ میں علاقے کی خواتین کو مقامی جرگے نے ووٹ کاسٹ کرنے سےروک دیا، ذرائع کے مطابق آراو نے علاقہ معززین سے مذاکرات کیے لیکن اس کے باوجود خواتین کے ووٹ کاسٹ نہ ہوسکے۔

الیکشن کمیشن نے خواتین کو ووٹ دینے سے روکے جانے کا نوٹس لےلیا ہے۔ ان حلقوں میں خواتین کی ووٹ کاسٹ کا ٹرن آوٹ دس فی صد سے کم ہوا تو نتائج کالعدم قرار دیئے جائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں