The news is by your side.

دنیا کی سب سے بڑی آئی فون فیکٹری کے باہر ملازمین کا احتجاج

چینی شہر ژینگژو میں قائم دنیا کی سب سے بڑی آئی فون فیکٹری کے باہر سیکڑوں ملازمین  کے کمپنی کی جانب سے مبینہ طور  پر کانٹریکٹ تبدیل کرنے کے خلاف احتجاج کیا جارہا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق آئی فون فیکٹری کے باہر سیکڑوں ملازمین  کے کمپنی کی جانب سے مبینہ طور  پر کانٹریکٹ تبدیل کرنے کے خلاف احتجاج اور اینٹی رائیٹز فورسز کے ساتھ جھڑپوں کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہیں۔

 ورکرز کا کہنا تھا کہ کمپنی کی جانب سے ملنے والی سبسڈی کے حوالے سے کانٹریکٹ تبدیل کر دیا گیا ہے اور قرنطینہ کے دوران انہیں کھانا بھی نہیں دیا جا رہا۔

سوشل میڈیا پر گردش کرتی ویڈیوز میں دیکھا گیا کہ ملازمین اپنے حقوق کے تحفظ کیلئے نعرے بازی کر رہے ہیں، انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ اگر ان کے مطالبات کو تسلیم نہیں کیا جاتا تو ان کا احتجاج جاری رہے گا۔

مظاہرین کا کہنا ہے کہ پولیس کی جانب سے ورکرز پر تشدد کیا گیا ہے، جبکہ ویڈیوز میں بھی پولیس اور مظاہرین کی درمیان جھڑپیں دیکھی گئیں۔

دوسری جانب فاکس کان مینوفیکچرر کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ اسٹاف اور لوکل حکومت کے ساتھ تشدد کو روکنے کیلئے کام جاری ہے۔

اپنے ایک بیان میں کمپنی کا کہنا ہے کہ کچھ مزدوروں کو ادائگیوں کے حوالے سے خدشات ہیں تاہم کمپنی ملازمین کے ساتھ اپنے کانٹریکٹ کے تحت ادائگیاں کر رہی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ مہینے کئی کووڈ کیسز ظاہر ہونے کے بعد چینی شہر ژینگژو میں واقع آئی فون مینوفیکچرر کمپنی کی سائٹ بند کر دی گئی تھی اور کووڈ پازیٹو ملازمین کو گھر بھیج دیا گیا تھا جس کے بعد کمپنی نے بونس کے وعدوں کے ساتھ نئے ملازمین کی بھرتیاں شروع کی تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں