The news is by your side.

Advertisement

لڑکیوں کا عالمی دن، پاکستان کا نام روشن کرنے والی طالبات

کراچی : پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج لڑکیوں کا عالمی دن منایا جا رہا ہے، اس دن کو منانے کا مقصد لڑکیوں کو درپیش مسائل ، صنفی امتیاز، مساوی مواقع کی عدم دستیابی، بنیادی انسانی حقوق کے حصول میں مشکلات اورمظالم وتشدد کی طرف دنیاکی توجہ مبذول کروانا ہے۔

دنیا بھر میں 11 اکتوبر کو انٹر نیشنل ڈے فار دی گرلز چائلڈ کے طور پر منایا جاتا ہے۔ اقوام متحدہ نے 19 دسمبر 2011 کو یہ دن منانے کی قرار داد پاس کی تھی۔

اقوام متحدہ کے اداراہ یونیسیف کے مطابق دنیا بھر میں پرائمری اسکول جانے کی عمر والی تین کروڑ 10 لاکھ بچیاں اسکول نہیں جا رہی ہیں، دنیا بھر میں 15 سے 19 سال کی عمر کی ہر چار میں سے ایک لڑکی کو جسمانی تشدد کا سامنا کرنا پڑتا ہے جبکہ پاکستان میں اس عمر کی تیس فیصد لڑکیوں کو مختلف قسم کے تشدد کا سامنا ہے۔


پاکستان کا نام روشن کرنے والی لڑکیاں


حدیقہ بشیر

hadiqa

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخواہ کے ضلع سوات سے تعلق رکھنے والی نویں جماعت کی طالبہ حدیقہ بشیر کو ایشین گرلز کی سفیر مقرر کیا گیا ہے، وہ یہ اعزاز حاصل کرنے والی پہلی پاکستانی لڑکی ہیں۔

عالیہ حریر

aliya

عالیہ حریر کو بھارت میں جاری ‘گلوبل یوتھ پیس فیسٹول‘ میں انہیں گلوبل یوتھ آئیکن ایوارڈ سے نوازا گیا، عالیہ 19 طالبات کے وفد ساتھ چندی گڑھ گئی تھیں۔ وہ پاکستان سے مختلف اسکولوں کے طلبہ کی جانب سے دوستی اور امن کے پیغام کو لے کر بھارت گئی تھیں۔

شوانہ شاہ

shawana

پاکستانی طالبہ شوانہ شاہ نے امریکہ میں محمد علی ہیومنٹرین ایوارڈ جیت کر پاکستان کا نام دنیا بھر میں روشن کردیا، شوانہ شاہ سال دو ہزار بارہ سے معاشرے کی پسماندہ خواتین اور ان پر ہونے والے تشدد اور جنسی طور پر ہراساں ہونے والی خواتین کے حقوق کیلئے کام کررہی ہیں۔

سدرہ

sidra

صوابی سے تعلق رکھنے والی طالبہ سدرہ نے چارٹرڈ اکاونٹنٹ کے امتحان میں 180 ممالک کے طلبا و طالبات کو مات دے کر پوری دنیا میں پہلی پوزیشن حاصل کر لی اور ملک و قوم کا نام روشن کیا۔

روما سیدین

roma

پاکستان کی روما سیدین نے کم ترین عمر میں ایتھیکل ہیکر کا سرٹیفکیٹ حاصل کرکے عالمی ریکارڈ اپنے نام کر لیا۔ ایتھیکل ہیکنگ کا کورس کرنے والے عموما 18 سال کی عمر میں اسے مکمل کر پاتے ہیں، لیکن پاکستان کی روما سیدین نے ساڑھے 13 سال کی عمر میں اس کا سرٹیفکیٹ حاصل کر کے عالمی اعزاز حاصل کیا۔

سارہ احمد

sarah

پاکستان کی سارہ احمد جو لاہور کی انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی یونیورسٹی کی طلبہ ہے، مائیکروسافٹ نے انفارمیشن ٹیکنالوجی میں کوششوں کو تسلیم کرتے ہوئے ہیرو مائیکروسافٹ پارٹنر کے ایوارڈ 2016 سے نوازا۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں