The news is by your side.

Advertisement

روسی حملے میں تباہ شدہ دنیا کے سب سے بڑے طیارے کا پاکستان سے کیا تعلق ہے؟

کراچی: آپ یہ جان کر حیران رہ جائیں گے کہ یوکرین میں روسی حملے میں تباہ شدہ دنیا کے سب سے بڑے ہوائی جہاز کی پاکستان سے بھی یادیں وابستہ ہیں۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین پر حملے کے چوتھے روز روس نے دارالحکومت کیف کے نواح میں دنیا کے سب سے بڑے جہاز کو تباہ کر دیا تھا، اس دیوہیکل ہوائی جہاز ماریا اے این 225 سے پاکستان کی بھی یادیں وابستہ ہیں۔

یہ معلومات آپ کے دل چسپی کا باعث ہوں گی کہ دنیا کے سب سے بڑے جہاز نے 23 جون 2021 کو کابل سے اڑان بھرنے کے بعد کراچی میں لینڈنگ کی تھی، اور 24 جون کو 21 گھنٹوں بعد یہ دیوہیکل طیارہ کراچی سے اسلام آباد روانہ ہو گیا تھا۔

جناح انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر پی ایس او نے یوکرین کے طیارے کو ری فیولنگ کی سروس دی تھی، دنیا کے سب سے بڑے طیارے میں 2 لاکھ 25 ہزار لیٹر سے زائد فیول بھرا گیا تھا۔

ری فیولنگ کے دوران 8 بار فیول ٹینکر کے ٹرپ لگے اور 3 گھنٹے کا ٹائم لگا۔

روس کا یوکرین پر حملہ : دنیا کا سب سے بڑا جہاز تباہ

روسی حملے کے بعد تباہ ہونے والے ماریا اے این 225 طیارے کا انتونوف کمپنی کے ماہرین نے طیارے کا معائنہ کیا ہے، کمپنی کا کہنا ہے کہ طیارے کی ٹیکنیکل کنڈیشن کے بارے میں فی الحال نہیں بتا سکتے۔

ماریا اے این 225 کے 6 انجن تھے جن کی مدد سے یہ اڑان بھرتا تھا، یہ طیارہ 1988 میں بنایا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں