The news is by your side.

Advertisement

میچ ہارنے کے بعد خاتون ریسلر کی خودکشی: اسپورٹس افسر کا اہم بیان

نئی دہلی: ریسلنگ کا میچ ہارنے سے دلبرداشتہ خاتون ریسلر کی خودکشی کے بعد اسپورٹس افسر کا کہنا ہے کہ مقابلہ مکمل طور پر منصفانہ طریقے سے منعقد کیا گیا تھا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق خاتون ریسلر کی خودکشی کے بعد بھرت پور کے ڈسٹرکٹ اسپورٹس آفیسر ستیہ پرکاش نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مقابلہ مکمل طور پر منصفانہ طریقے سے منعقد کیا گیا تھا اور ریتیکا میچ کے بعد خوشی خوشی گھر چلی گئی تھی۔

افسر کا کہنا تھا کہ ریتیکا نے کس وجہ سے یہ انتہائی قدم اٹھایا، یہ کہنا مشکل ہے۔ وہ اس کی موت کے بارے میں جان کر سخت حیران و پریشان ہیں۔

ریسلر ریتیکا فوگاٹ نے 12 سے 14 مارچ کے دوران ریاست راجستھان کے شہر بھرت پور میں ہونے والے جونیئر ویمن ریسلنگ مقابلوں میں حصہ لیا تھا، ریاستی سطح کے ان مقابلوں میں تمام جونیئر، جونیئر خواتین اور مردوں کی ریسلنگ کے مقابلے منعقد ہوئے۔

ریتیکا ویمن ریسلنگ کے فائنل تک پہنچ گئی تھیں، تاہم میچ میں کچھ بدمزگی ہوئی تھی۔ میچ کے اختتام پر پہلے ریتیکا کو فاتح قرار دیا گیا لیکن پوائنٹس کے سلسلے میں بحث ہوئی جس کے بعد ریتیکا کی حریف کو فاتح قرار دیا گیا۔

6 منٹ کے میچ کے بعد ریتیکا اپنے گھر چلی گئی تھیں تاہم اسی رات انہوں نے پھندا لگا کر خودکشی کرلی جس کا علم گھر والوں کو صبح ہوا۔

ریتیکا معروف پہلوان مہاویر سنگھ فوگاٹ کی بھتیجی بھی تھیں اور ان کے اکھاڑے میں 5 سال سے تربیت حاصل کر رہی تھیں۔ مہاویر سنگھ کی بیٹیاں گیتا اور ببیتا بھی ملک کی معروف ریسلرز ہیں جن پر بالی ووڈ فلم دنگل بھی بنائی جا چکی ہے۔

واقعے کے بعد ملک بھر میں دکھ کی لہر دوڑ گئی، پولیس کیس کے مختلف خطوط پر تفتیش کر رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں