The news is by your side.

سال 2015 : پاکستان میں ہونے والے اہم واقعات و خبروں پر ایک نظر

کراچی : ہر سال کئی اتار چڑھاؤ کے ساتھ گزر جاتا ہے،تاہم اس سال کو سیاسی تنازعات کا سال قرار دیا جا سکتاہے، سال دوہزار پندرہ میں پاکستان میں ہو نے والے اہم واقعات میں سے چند واقعات اور خبروں کے حوالے سے رپورٹ کے مطابق اس سال سیاسی اتار چڑہاؤ دیکھنے میں آیا۔

رینجرز کا ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر چھاپہ

کراچی کے علاقے عزیزآباد میں رینجرز نے گیارہ مارچ کو سرچ آپریشن کیا اور متحدہ قومی موومنٹ کے سیاسی مرکز نائن زیرو اوراس سے ملحقہ علاقے کے راستے بند کرکے تلاشی لی گئی،آپریشن کے دوران کچھ گرفتاریاں بھی عمل میں آئیں۔

آپریشن کے دوران متحدہ کے اہم رہنما عامرخان سمیت کئی کارکنوں کوتحویل میں لے لیا گیا جبکہ وہاں سے غیرملکی اسلحہ بھی برآمد ہوا، ترجمان رینجرز کا کہنا تھا کہ آپریشن مکمل معلومات کی بنیاد پرکیا گیا۔ نائن زیرو کے اردگرد بیریئر لگا کراکیس گلیاں بند کی گئی تھیں۔

کرنسی اسمگلنگ کیس میں ماڈل ایان علی کی گرفتاری

مارچ کی 14 تاریخ کو اسلام آباد بینظیرانٹرنیشنل ائیرپورٹ پر ملک کی نامور ماڈل آیان علی کو گرفتار کر کے 5 لاکھ امریکی ڈالربرآمد کرلئے گئے۔

ائیرپورٹ ذرائع کے مطابق ماڈل آیان علی کو نجی ایئرلائن کی پرواز کے ذریعے دبئی جاتے ہوئے بے نظیرانٹرنشنل ائیرپورٹ پر منی لانڈرنگ کے الزام میں گرفتار کیا گیا۔

سامان کی تلاشی کے دوران بیگ کے خفیہ خانوں سے پانچ لاکھ ڈالر سے زائد کی رقم برآمد کی گئی تھی۔ کسٹم حکام نے ملزمہ کو حراست میں لے کر اسے کسٹم ہاؤس منتقل کردیا تھا

ڈاکٹر عاصم حسین کرپشن کے الزام میں گرفتار

چیئرمین سندھ ہائرایجوکیشن کمیشن اور پیپلز پارٹی کے سابق وفاقی وزیر و سابق سینیٹر ڈاکٹر عاصم حسین کو کرپشن کے الزام میں 26 اگست کو کراچی سے سادہ لباس اہلکاروں نے حراست میں لیا۔

ڈاکٹر عاصم حسین کو اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے دفتر میں وائس چانسلرز کیلئے انٹرویوز کر رہے تھے۔

ڈاکٹر عاصم حسین نجی یونیورسٹیز اوراسپتالوں کے مالک ہیں اور سابق صدرآصف علی زرداری کے قریبی ساتھی تصور کئے جاتے ہیں۔

سابق حکومت میں وہ وفاقی وزیر پیٹرولیم تھے۔ بعد ازاں رینجرز نے عدالت سے ان کا 90 روزہ ریمانڈ حاصل کیا،دوران تفتیش ڈاکٹر عاصم حسین نے کئی اہم انکشافات کئے۔

تا ہم اب وہ نیب کی حراست میں ہیں۔ اور ان کے خلاف مقدمات زیر سماعت ہیں۔

قتل کے مجرم صولت مرزا کو پھانسی دے دی گئی

کے ای ایس سی کے سابق ایم ڈی شاہد حامد قتل کیس کا مرکزی مجرم صولت مرزا 12 مئی کو اپنے منطقی انجام کو پہنچ گیا

،مچھ جیل میں صولت مرزا کو پھانسی دے دی گئی، سولہ سال سے سزائے موت کے منتظر قیدی صولت مرزا کی رحم کی تمام اپیلیں مسترد ہونے کے بعد علی الصبح مچھ جیل میں پھانسی دی گئی۔

عدالت نے صولت مرزا کو انیس سو ستانوے میں سابق ایم ڈی کے ای ایس سی شاہدحامد کے قتل کے جرم میں موت کی سزا سنائی تھی۔

واضح رہے کہ صولت مرزا کی پھانسی اس سےقبل دو بار موخر ہوئی، صولت مرزا کو پہلی بار انیس مارچ کو پھانسی دی جانی تھی،جو اسی شب جیل سےصولت مرزا کے سنسنی خیز انکشافات پر مؤخرکردی گئی تھی۔

آصف علی زرداری کا پاک فوج کیخلاف بیان

پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے 16 جون کو پشاور میں پیپلزپارٹی کے پی کے عہدیداروں کی تقریب میں پاک فوج کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کردار کشی مت کرو، سرحدوں پر آپ کو للکارا جا رہا ہے۔ ہم آپ کا ساتھ دینا چاہتے ہیں، تنگ کیا گیا تو جرنیلوں کا کچا چٹھا کھول دوں گا۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ ہمیں بھی جنگ لڑنا آتی ہے ، آپ کوتین سال رہنا ہے ، ہمیں ہمیشہ یہاں رہنا ہے ، ہمیں تنگ کرنے کی کوشش کی تو ہم بھی اینٹ سے اینٹ بجا دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اگرہم کھڑے ہوئے تو فاٹا سے کراچی تک بند ہوگا، جب تک چاہیں گے ملک بند رہےگا۔ آصف زرداری نے کہا کہ پیپلزپارٹی کمزورنہیں لیکن ابھی ہماراوقت نہیں آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک اشارے پرلوگوں کی جان لےلی جاتی ہے، ہمارےپاس ایسے لوگ ہیں جوکبھی بکے ہیں نہ کبھی بکیں گے،ہم نے جسے وکٹ دی ہوئی ہےاسےکھیلنے تودو،اسے ملک کی معیشت ٹھیک کرنےد و۔

آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ کہیں ایسا نہ ہوکہ بعد میں وہ موقع نہ ملنےکاگلہ کریں۔

قصور میں بچوں کے ساتھ ذیادتی کی ویڈیو کا شرمناک واقعہ

پنجاب کے شہر قصور میں حسین خان والا دیہات میں ایک مقامی گروہ کے ملزمان دوسو چھیاسی کمسن بچوں اور بچیوں کو زیادتی کا نشانہ بنا نےکے بعد ان کی وڈیو بناکر بلیک میلنگ کررہے تھے۔

یہ سلسلہ دو ہزار نو سے جاری تھا، یہ واقعہ ملکی تاریخ میں بچوں کے ساتھ زیادتی کا سب سے بڑا اسکینڈل ہے۔ وڈیو کلپس کے سامنے آنے کے بعد پولیس نے ملزمان کیخلاف کارروائی کی ۔

 کارروائی کے دوران چھ ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا جبکہ دیگر فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ جن کو بعد ازاں گرفتار کرلیا گیا۔

پولیس کی جانب سے مبینہ طور پر انتہائی کمزور کیس بناکر عدلیہ میں پیش کرنے سے ملزمان کو با آسانی ضمانتیں مل گئیں تھیں۔

وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے معاملے کی انکوائری اور ملزمان کی گرفتاری کے لئے کمیٹی قائم کردی تھی۔اور بعد ازاں قصور ویڈیو اسکینڈل کی جوڈیشل انکوائری کا اعلان کیا تھا۔

معروف سماجی رہنما سبین محمود کا قتل

ممتاز سماجی رہنما اور معروف این جی او کی ڈائریکٹر سبین محمود کو مورخہ 24 اپریل کو کراچی میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے ہلاک کردیا۔

این جی او دی سیکنڈ فلور (ٹی ٹو ایف) کی ڈائریکٹر سبین محمود اپنی والدہ کے ساتھ رات نو بجے ڈیفنس فیز ٹومیں اپنے دفتر سے گھر جانے کے لئے نکلی تھیں کہ راستے میں نامعلوم افراد نے ان پر فائرنگ کردی۔

سبین محمود کو زخمی حالت میں اسپتال لے جایا جا رہا تھا تاہم انہوں نے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستے میں ہی دم توڑ دیا۔

فائرنگ کے واقعے میں سبین کی والدہ بھی زخمی ہوئی تھیں، پولیس نے سبین محمود قتل کیس میں اہم ملزمان کو گرفتار کیا ہے جن کیخلاف مقدمات زیر سماعت ہیں۔

سانحہ بلدیہ ٹاؤن کی جے آئی ٹی رپورٹ

سانحہ بلدیہ ٹاؤن کوئی حادثہ نہیں بلکہ منظم دہشت گردی تھی، فیکٹری کو آگ بھتہ نہ دینے پر لگائی گئی۔ یہ رپورٹ سات فروری کو منظر عام پرآئی۔

سانحہ بلدیہ ٹاؤن کی جے آئی ٹی کی رپورٹ میں انکشاف ہوا کہ یہ اتفاقی حادثہ نہیں بلکہ منظم دہشت گردی تھی، گرفتارملزم نے دورانِ تفتیش اس بات کا انکشاف کیا کہ سیاسی جماعت کے اعلیٰ عہدیدار نے فیکٹری مالکان سے بیس کروڑ بھتہ مانگا تھا۔

فیکٹری مالکان بات کرنے گئے تو اعلیٰ عہدیدار نے لاتعلقی ظاہر کی، تلخ کلامی کے بعد اس سے پارٹی کی ذمہ داریاں واپس لے لی گئیں اور بھتہ نہ ملنے پر کیمیکل پھینک کر علی انٹرپرائزز کو آگ لگادی۔

رپورٹ کے مطابق اس وقت کے ایک وزیر نے فیکٹری مالکان کے خلاف مقدمہ درج کرایا، سابق وزیراعظم نے مالکان کی ضمانت کرائی، تاہم دباؤ پر پیچھے ہٹ گئے۔

فرنٹ مین نے کیس ختم کرانے کیلئے فیکٹری مالکان سے پندرہ کروڑ روپے لئے۔ جی آئی ٹی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملزم کےایم سی کا سینیٹری ورکر اور سیاسی جماعت کا کارکن ہے۔

عدالت نے رینجرز کی جانب سے جمع کرائی گئی رپورٹ کو ریکارڈ کا حصہ بنالیا

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی اچانک پاکستان آمد

مورخہ 25 دسمبر کو بھارتی وزیراعظم افغانستان کے دورے پر تھے اور انہوں نے وزیراعظم نواز شریف کو فون پرسالگرہ کی مبارک باد پیش کی۔

مودی نے اپنے ٹویٹرپیغام میں خواہش ظاہر کی تھی کہ وہ وزیراعظم میاں نواز شریف سے لاہور میں ملاقات کرنا چاہتے ہیں۔ لاہور پہنچنے پر وزیر اعظم نواز شریف نے ان کا پر تپاک استقبال کیا۔

بعد ازاں وہ وزیراعظم نواز شریف کے ہمراہ جاتی امراء پہنچے اور وزیر اعظم کے اہل خانہ سے ملاقات کی اور ان کو نواز شریف کی نواسی کی شادی کی مبارکباد دی۔

 بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی وزیراعظم نوازشریف سے مختصر ملاقات کے بعد وطن واپسی کیلئے جاتی امراء سے ایئرپورٹ کیلئے روانہ ہو گئے۔

سیکیریٹری خارجہ کے مطابق بھارتی وزیر اعظم کے دورے کو خیرسگالی کا دورہ قراردیتے ہوئے کہا کہ بھارتی وزیراعظم نے نوازشریف سے پاکستان آنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا جس پر وزیراعظم نوازشریف نے انہیں خوش دلی کے ساتھ خوش آمدید کہا۔

مردان میں خود کش دھماکہ، 26 افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے

مردان میں مورخہ 29 دسمبر کو نادرا کے دفتر میں خود کش دھماکہ ہوا ، جس کے نتیجے میں 26 افراد جاں بحق جبکہ 50سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

مردان میں نادرا کے دفتر کے گیٹ پر ہونے والا دھماکہ اتنا شدید تھا جس کی آواز دور دور تک سنی گئی۔ دھماکے میں آٹھ سے دس کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا.

دھماکے سے نادرا کی عمارت کی دیوارگر گئی اور دروازہ تباہ ہوگیا جبکہ ارد گرد کی عمارتوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں