سانحہ بلدیہ: ہاں آگ میں نے لگائی، رحمان بھولا عدالت میں روپڑا ARYNews.tv
The news is by your side.

Advertisement

سانحہ بلدیہ: ہاں آگ میں نے لگائی، رحمان بھولا عدالت میں روپڑا

کراچی: سانحہ بلدیہ میں 259 لوگوں کو زندہ جلانے کا مرکزی ملزم عبدالرحمان عرف بھولا عدالت میں اعتراف جرم کرتے ہوئے رو پڑا اور کہنے لگا کہ آگ حماد صدیقی کے حکم پر لگائی تھی، اپنے کیے پر شرمند ہوں۔


اے آر وائی نیوز کے نمائندہ کراچی فیض اللہ نے بتایا کہ ملزم رحمان عرف بھولا کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں ملزم نے جوڈیشل مجسٹریٹ کے روبرو اعتراف کیا کہ آگ اس نے لگائی اور اس کا حکم اسے متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما حماد صدیقی نے دیا تھا جس پر عدالت نے اسے دو سے تین گھنٹے سوچنے کا وقت دیا کہ وہ اپنے بیان پر غور کرلے۔

یہ پڑھیں: سانحہ بلدیہ کے بعد بھولا نائن زیرو میں روپوش رہا، اہلیہ ثمینہ

بعدازاں اسے دوبارہ عدالت میں پیش کیا گیا جہاں اس نے دوبارہ اعتراف کیا کہ وہ اپنے بیان سے متعلق سوچ چکا ہے آگ اس نے ہی لگائی اور اس کا حکم حماد صدیقی نے دیا۔

اس کا مزید کہنا تھا کہ متحدہ قومی موومنٹ کی جانب سے شہر میں جلاؤ اور گھیراؤ کی وارداتیں کی جاتی رہی ہیں،وہ اپنے کیے پر شرمندہ ہے اور اس نے جو کچھ کیا آج وہ اس پر شرمندگی محسوس کرتا ہے، یہ کہتے ہوئے ملزم جج کے روبرو پھوٹ پھوٹ کر روپڑا۔

اسی سے متعلق: سانحہ بلدیہ ٹاؤن، عبدالرحمان عرف بھولا کا ملوث ہونے کا اعتراف، حماد صدیقی ماسٹر مائنڈ قرار

واضح رہے کہ مرکزی ملزم رحمان بھولا 29 دسمبرتک جسمانی ریمانڈپرپولیس کی تحویل میں ہے،رحمان بھولا کو چند روز قبل انٹر پول پولیس کی مدد سے بنکاک سے گرفتار کر کے پاکستان لایا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: بھولا کی گرفتاری، پرانے ساتھیوں کا پہچاننے سے انکار

رحمان بھولا کے بیان کے بعد دبئی میں روپوش متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما حماد صدیقی کی گرفتاری کے لیے وزارت داخلہ نے انٹرپول سے درخواست کردی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں