The news is by your side.

Advertisement

یونس خان نے غلطیوں کی نشاندہی کر دی

پاکستان کے سابق کپتان یونس خان نے آسٹریلیا کے خلاف سیمی فائنل میں غلطیوں کی نشاندہی کر دی۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے یونس خان نے کہا کہ مجموعی طور پر قومی ٹیم نے زبردست ‏کارکردگی کا مظاہرہ کیا لیکن بڑے میچ میں جو غلطیاں انگلینڈ نے کیں وہی پاکستان سے ہوئیں۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز بھی کہا تھا کہ انگلینڈ نے اسپنرز کا بھرپور استعمال نہ کر کے بلنڈر کیا اور آج ‏پاکستان نے بھی اسپن بولنگ آپشنز کو ٹھیک سے استعمال نہیں کیا، پہلے ہی کہا تھا کہ انگلینڈ کی ہار سے سبق ‏سیکھنا ہوگا انگلش ٹیم نے معین علی سے حیران کن طور پر بولنگ نہیں کروائی اور فاسٹ بولرز پر اعتماد کیا۔

یونس خان نے کہا کہ اسپن بولنگ کا شعبہ کمزور تھا گو کہ عماد اور شاداب نے اچھی بولنگ کی ہے تاہم ان کے ‏ساتھ کوئی اور وکٹ ٹیکنگ اسپن آپشن نہیں تھا، بار بار کہا تھا ایک اور اسپنر کو آزمائیں ٹیم میں تبدیلی کر کے ‏کچھ کھلاڑیوں کو آرام دیں تاکہ انداز ہو کہ مشکل میں اسپن آپشنز ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ آج کے میچ میں بھی اسپنرز کی کمی محسوس ہوئی، عماد اور شاداب کے علاوہ کوئی اور وکٹ ‏ٹیکنگ اسپن آپشن نہیں تھا، حسن علی اور عماد کو ڈراپ کر کے دیگر اسپنرز کو موقع دے سکتے تھے۔

سابق کپتان نے کہا کہ گزشتہ ایک ماہ سے جس طرح ٹیم نے کارکردگی کا مظاہرہ کیا وہ انتہائی زبردست ہے جتنی خوشیاں ‏اس ٹیم نے دی ہیں ایک میچ کی ہرا پر تنقید نہیں کر سکتے ہمیں اس ٹیم کو پورا سپورٹ کرنا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں