The news is by your side.

Advertisement

سابق صوبائی وزیر کھیل کے خلاف یوتھ فیسٹیول انکوائری بند کرنے کا فیصلہ

لاہور: سابق صوبائی وزیر رانا مشہود کے خلاف یوتھ فیسٹیول انکوائری بند کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو (نیب) نے رانا مشہود کے خلاف یوتھ فیسٹیول انکوائری بند کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے سفارش چیئرمین نیب کو بھجوا دی۔

نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ یوتھ فیسٹیول کے دوران بے ضابطگیوں میں رانا مشہود کے ملوث ہونے کے کوئی شواہد نہیں ملے، وہ دوران تفتیش کسی بے ضابطگی میں ملوث نہیں پائے گئے۔

نیب دستاویزات کے مطابق وسیم احمد یوتھ فیسٹیول انکوائری میں وعدہ معاف گواہ بنے تھے، انھوں نے رانا مشہود پر غیر قانونی طور پر ادائیگیوں کا الزام لگایا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ نیب نے میوچل لیگل اسسٹنٹ کے تحت لکھے خطوط کے بعد رانا مشہود کے خلاف انکوائری بند کرنے کا فیصلہ کیا، کیوں کہ ان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں ملے۔

یوتھ فیسٹیول کرپشن ریفرنس میں رانا مشہود نامزد

واضح رہے کہ 2013-14 کے یوتھ فیسٹیول کے وقت رانا مشہود کھیل اور یوتھ افیئر کے وزیر تھے، ملزم وسیم احمد کو نیب نے پنجاب یوتھ فیسٹیول کرپشن کیس میں گرفتار کیا تھا، اگست 2019 میں وسیم احمد نے وعدہ معاف گواہ بن کر سابق صوبائی وزیر کھیل رانا مشہود اور سابق ڈی جی اسپورٹس عثمان احمد کے خلاف بیان ریکارڈ کروایا۔

ملزم کے بیان کے مطابق یوتھ فیسٹیول میں رانا مشہود اور سابق ڈی جی اسپورٹس بورڈ نے غیر قانونی ٹھیکے دیے جس سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچے، بیان کے مطابق ایسی کمپنیوں کو ٹھیکے دیے گئے جو رجسٹرڈ ہی نہیں تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں