زینب قتل کیس: مجرم عمران کو سرعام پھانسی دینے کی درخواست مسترد -
The news is by your side.

Advertisement

زینب قتل کیس: مجرم عمران کو سرعام پھانسی دینے کی درخواست مسترد

لاہور: لاہور ہائی کورٹ نے زینب قتل کیس کے مجرم عمران کو سرعام پھانسی دینے کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کردی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جج نے زینب قتل کیس کے مجرم عمران کو سرعام پھانسی دینے کے لیے مقتولہ کے والد کی درخواست پرسماعت کی۔

لاہور ہائی کورٹ میں سماعت کے دوران صوبائی سیکرٹری داخلہ کی جانب سے لا افسرنے جواب داخل کرایا۔

سرکاری وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ قانون میں کوئی ایسی شق نہیں جس کے تحت سرعام پھانسی دی جاسکے، سرعام پھانسی کے معاملے پرسپریم کورٹ فیصلہ جاری کرچکی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ کے جج نے زینب قتل کیس کے مجرم عمران کو سرعام پھانسی دینے کی درخواست مسترد کردی۔

عدالت میں درخواست زینب کے والد حاجی امین کی جانب سے دائر کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ ملزم کی پھانسی کولائیوٹیلی کاسٹ کرنے کا بھی عدالت حکم دے سکتی ہے۔

درخواست گزار کے وکیل کا کہنا تھا کہ مقصد صرف عوام کوایک گھناؤنے جرم میں ملوث مجرم کونشان عبرت بنانا ہے، مجرم سیریل کلرہےاورکل اسے پھانسی دی جانی ہے۔

حاجی امین کے وکیل کا کہنا تھا کہ ایکٹ1997کے سیکشن22 کے مجرم کوسرعام پھانسی دی جا سکتی ہے۔

ننھی زینب کے قاتل کو17 اکتوبر کو پھانسی دی جائے

واضح رہے کہ 12 اکتوبر کو انسداد دہشت گردی عدالت نے زینب قتل کیس کے مجرم عمران کے ڈیتھ وارنٹ جاری کیے تھے جس کے تحت مجرم کو کل 17 اکتوبرکو پھانسی دی جائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں