The news is by your side.

Advertisement

یمن: حوثی باغیوں اور فورسز کے درمیان شدید جھڑپیں، 16 افراد ہلاک

صعنا: یمن میں حوثی باغیوں اور فورسز کے درمیان شدید جھڑپوں کے نتیجے میں دونوں اطراف سے 16 افراد مارے گئے۔

تفصیلات کے مطابق یمنی شہر عتق میں یمنی حکومتی فوج اور عبوری کونسل کی فورسز کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں، جھڑپوں میں دونوں اطراف سے 16 ارکان ہلاک اور درجن سے زائد زخمی ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جھڑپوں کے دوران جنوبی عبوری کونسل کے زیر انتظام الشبوانیہ ایلیٹ فورس شہر میں اپنے متعدد ٹھکانوں کو چھوڑ کر نکل گئی۔

ادھریمن میں جنوبی عبوری کونسل کے نائب سربراہ ہانی بن بریک نے یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے اتحاد سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ شبوہ صوبے کے شہر عتق میں جنم لینے والی صورت حال کے ذمے دار فریق کا پتہ چلانے کے واسطے ایک تحقیقاتی کمیٹی بھیجے۔

عرب اتحاد نے صعدہ میں حوثیوں کا آپریشن کنٹرول روم تباہ کردیا،17جنگجو ہلاک

بن بریک کا یہ مطالبہ جمعہ کو علی الصبح کی جانے والی ایک ٹویٹ میں سمنے آیا۔ دوسری جانب شبوہ صوبہ کے سیکورٹی ڈائریکٹر بریگیڈیر جنرل عوض الدحبول نے کہا کہ یمنی فوج اور سیکورٹی فورسز نے عتق شہر کی صورت حال پر قابو پا لیا ہے۔

جبکہ شبوہ صوبے کے شیوخ اور اہم شخصیات نے جاری ایک بیان میں کہا کہ عبوری کونسل صوبے کو تشدد اور انارکی میں دھکیلنا چاہتی ہے۔ شیوخ نے بیان میں واضح کیا کہ وہ صدر عبدربہ منصور ہادی کی سیاسی قیادت اور یمنی قومی فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں