The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں پولیو کیسز کی تعداد میں اضافہ

اسلام آباد: ملک میں پولیو کے مزید دو نئے کیس سامنے آئے ہیں جس کے بعد رواں برس رپورٹ ہونے والے کیسز کی مجموعی تعداد 53 تک پہنچ گئی۔

اے آر وائی نیوز کو قومی ادارہ برائے صحت کے ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق بلوچستان اور سندھ کے دو بچوں میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

بلوچستان کے علاے ڈکی کے تین ماہ کے بچے اور سندھ کے ضلع گھوٹکی میں چار سال کا بچہ پولیو سے متاثر ہوا ہے، ملک میں 2نئےپولیو کیس سامنے آنے کے بعد رواں برس رپورٹ ہونے والے مجموعی کیسز کی تعداد 53 تک پہنچ گئی۔

ذرائع کے مطابق پولیو کا شکار ہونے والے بچوں کے والدین نے ویکسیشن نہیں کرائی اور نہ ہی انہوں نے انسداد پولیو کے قطرے پلوائے۔

مزید پڑھیں: بلوچستان میں 24 ماہ کے بچے میں پولیو وائرس کی تصدیق

یاد رہے کہ اس سے قبل مئی کے مہینے میں پولیو کے دو نئے کیسز رپورٹ ہوئے تھے جبکہ اُس سے قبل مارچ میں تین بچوں میں وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔

صوبائی سطح پر اگر بات کی جائے تو  رواں سال میں اب تک صوبہ سندھ میں 21، خیبرپختونخواہ میں 18، بلوچستان میں 11 اور پنجاب میں 3 کیسز رپورٹ ہوئے۔

پولیو کے حوالے سے سال 2019 بدترین رہا جب ملک بھر میں 146 نئے کیسز سامنے آئے تھے، یہ شرح سنہ 2014 کے بعد بلند ترین تھی اسی وجہ سے 2019 کو پولیو کے حوالے سے بدترین قرار دیا گیا تھا جبکہ اس سے قبل 2014 میں پولیو وائرس کے 306 کیسز سامنے آئے تھے۔

گزشتہ برس کے مجموعی 146 پولیو کیسز میں سے صرف خیبر پختونخواہ میں ریکارڈ کیے گئے پولیو کیسز کی تعداد 92 تھی۔ 30 کیسز سندھ میں اور بلوچستان اور پنجاب میں 12، 12 کیسز سامنے آئے تھے۔

اسی طرح سنہ 2015 میں ملک میں 54، 2016 میں 20، 2017 میں سب سے کم صرف 8 اور سنہ 2018 میں 12 پولیو کیسز ریکارڈ کیے گئے تھے۔ اس تمام عرصے میں پولیو کیسز کی سب سے زیادہ شرح صوبہ خیبر پختونخواہ میں دیکھی گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں