The news is by your side.

Advertisement

ونڈوز 11 متعارف، کس کمپیوٹر پر چلے گی اور نیا ورژن کیسے حاصل کیا جاسکتا ہے؟

کیلی فورنیا: مائیکروسافٹ  کمپنی نے 6 سال کے طویل عرصے بعد ونڈوز کا نیا ورژن متعارف کرادیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق ٹیک جائنٹ مائیکرو سافٹ نے 24 جون کو ونڈوز الیون (Windows 11) متعارف کروائی، جس کا انٹرفیس بالکل تبدیل ہے جبکہ اس میں پہلے سے زیادہ جدید فیچرز ہیں۔

کمپنی نے زیادہ توجہ انٹر فیس اور مکمل تبدیل شدہ لے آؤٹ ڈیزائن پر دیا، عام زبان میں اسے یوں سمجھا جاسکتا ہے کہ مائیکرسافٹ نے بہتری کے لیے اسے نئے انداز سے ڈیزائن کیا ہے۔

اس میں ایک مکمل نیا اسٹارٹ مینیو، ونڈوز اسٹور اور ریفریشنگ ڈیزائن شامل ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ اس تبدیلی کا مقصد صارفین کو بہتر کارکردگی کی سہولت فراہم کرنا ہے۔ مائیکرو سافٹ نے ویژول تبدیلی کو ’سن ویلی‘ کا نام دیا ہے۔

ونڈوز الیون کا یوزرانٹرفیس ونڈوز 10 ایکس سے مشابہت رکھتا ہے جس کو پہلے ڈوئل اسکرین ڈیوائسز کے لیے متعارف کرائے جانے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی البتہ چند وجوہات کی بنا پر اس کو پیش نہیں کیا گیا۔

نئی ونڈوز کیسے حاصل کی جاسکتی ہے؟

مائیکروسافٹ نے اعلان کیا کہ دنیا بھر کے صارفین رواں سال کے آخر تک اپنی موجودہ ونڈوز کو ونڈوز الیون سے بالکل مفت اپر گریڈ یا ڈاؤن لوڈ کرسکتے ہیں، جس کے لیے سسٹم کی شرائط پوری ہونا لازمی ہیں۔

کس کمپیوٹر پر چلے گی؟

مائیکروسافٹ کی جانب سے شائع ہونے والے بلاگ میں بتایا گیا ہے کہ ونڈوز الیون کے لیے کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ میں سیکیورٹی چپ 2.0 ہونا بہت ضروری ہے البتہ اگر کسی کمپیوٹر میں نہیں تب بھی صارف اسے استعمال کرسکتے ہیں۔

کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ کے ونڈوز 11 سسٹم کی شرائط دیکھنے کے لیے مائیکرسافٹ نے استعمال کنندگان کے لیے پی سی ہیکتھ چیک جاری کی، جس کے ذریعے معلوم کیا جاسکتا ہے کہ  کمپیوٹر ونڈوز 11 استعمال کرنے کے قابل ہے یا نہیں اور اس میں کس چیز کی کمی ہے۔

بلاگ پوسٹ میں بتایا کہ 6 سال کے طویل عرصے میں کمپیوٹرز میں بہت زیادہ تبدیلیاں آئی ہیں، اس لیے مشین کا اپ گریڈ ہونا بھی لازمی ہے۔ کمپنی نے بتایا کہ ونڈوز کو جدید کرنے اور ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھانے کے لیے بنیادی سسٹم کی شرط کو اپ ڈیٹ کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں