The news is by your side.

بیوی کا قتل: سینئر صحافی ایاز میر کے بیٹے کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

اسلام آباد : ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت نے بیوی کے قتل میں سینئر صحافی ایاز میر کے بیٹے شاہ نواز امیر کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت اسلام آباد میں گزشتہ روز اپنی اہلیہ کو چک شہزاد میں قتل کرنے والا ملزم لایا گیا۔

ملزم شاہنواز امیرکوسول جج مبشرحسن چشتی کی عدالت میں پیش کیا گیا، جج نے استفسار کیا شاہنواز کون ہے؟ آپ کو کب گرفتار کیاگیا؟

ملزم شاہنواز نے بتایا کہ مجھے جمعہ کی صبح گرفتار کیاگیا، تفتیشی افسر کا کہنا تھا کہ شاہنوازنےاپنی اہلیہ کوبے دردی سے قتل کیا ہے۔

جج نے شاہنواز کے وکیل سے استفسار کیا کچھ بولنا چاہتیں ہیں؟ جس پروکیل شاہنواز نے کہا بلائنڈ مرڈر ہے، پہلا ریمانڈ ہے، کوئی اعتراض نہیں۔

جج نے ملزم سے مکالمے میں کہا آپکو علم ہے آپ پر دفعہ 302 لگی ہے، پولیس تفتیشی افسر بتایا کہ ملزم نامزد ہے برآمدگی کرنی ہے، ملزم نےاہلیہ کوبیرون ملک سےبلاکرقتل کیا۔

وکیل ملزم کا کہنا تھا کہ یہ قتل صرف الزام کی حد تک ہے، پولیس کیجانب سےعدالت سے10دن کےجسمانی ریمانڈ کی استدعا کی۔

عدالت نے پولیس کی شاہنواز کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا پر فیصلہ محفوظ کرلیا، بعد ازاں عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے سینئر صحافی ایاز میر کے بیٹے شاہ نواز امیر کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈمنظور کرلیا۔

تفتیشی افسر نے کہا کہ ہمیں ملزم شاہنواز امیر کے فنگر پرنٹس کے نمونے چاہیے، جس پر جج نے ریمارکس دیئے کہ فنگرپرنٹس تو نادرا سے بھی لیے جاسکتے ہیں۔

عدالت نے تفتیشی افسر کی جانب سے فنگر پرنٹس لینے کی درخواست مسترد کر دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں