The news is by your side.

دو بیانیوں کا شکار ’’ن لیگ‘‘ مزید تقسیم

ایک طرف عمران خان کا دباؤ اور دوسری جانب مشکل فیصلوں سے دو بیانیوں کا شکار مسلم لیگ ن مزید تقسیم کا شکار ہوگئی ہے۔

ذرائع نے اے آر وائی نیوز کو بتایا ہے کہ ایک طرف عمران خان کا دباؤ اور دوسری طرف مشکل فیصلوں نے مسلم لیگ ن کو اس نہج پر پہنچا دیا ہے کہ اب پارٹی دو بیانیوں کے باعث مزید تقسیم کا شکار نظر آ رہی ہے اور پارٹی میں اب اس بات پر غور ہو رہا ہے کہ مشکل معاشی حالات پر قابو اور پارٹی کی گرتی سیاسی ساکھ کو کیسے بحال کیا جائے؟

ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف اینٹی اسٹیبلشمنٹ اور ووٹ کو عزت دو کے بیانیے کی بحالی کے حامی ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ ہمارے اس بیانیے کو عوام میں بہت پذیرائی ملی تھی۔ دوسری جانب پارٹی میں اس بحث کے چھڑنے پر وزیراعظم شہباز شریف جو مفاہمانہ پالیسی کے ہمیشہ حامی رہے ہیں وہ مزید دباؤ کا شکار ہوگئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ن لیگ کیا واپس ووٹ کو عزت دو کے بیانے کی طرف جائے گی؟ یا موجودہ مفاہمانہ کردار ہی جاری رکھے گی؟ آنے والے دنوں میں اس حوالے سے اہم فیصلے متوقع ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ اس حوالے سے پارٹی میں روز کی بنیاد پر زومز پر میٹنگ ہو رہی ہیں جس کی قیادت ن لیگ کے قائد نواز شریف کر رہے ہیں اور اس میں اختلاف رائے بڑے پیمانے پر سامنے آ رہا ہے۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی وطن واپسی کے بعد سرگرمیاں اسی جانب پیش قدمی ہیں۔ ان کے اقدامات سے لگتا ہے کہ انہوں نے حکومت کو ٹیک اوور کر لیا ہے تمام فیصلے وہی کر رہے ہیں اور وہ نواز شریف جو تمام معاملات پر مختلف نقطہ نظر رکھتے ہیں اس پر عملدرآمد کے لیے کوششیں شروع کردی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں