The news is by your side.

Advertisement

ابو ظہبی، ڈرائیونگ کے دوران کچرا پھینکنے والوں کی شامت، پولیس کا بڑا ایکشن

ابوظہبی: متحدہ عرب امارات کے محکمہ ٹریفک پولیس نےرواں برس کی پہلی سہہ ماہی رپورٹ جاری کردی جس کے مطابق گاڑی چلانے کے دوران سڑک پر کچرا پھینکنے کے قانون کی خلاف ورزی کرنے پر 85 افراد  کا چالان کاٹا گیا۔

عرب میڈیا کے مطابق ابوظہبی پولیس کی جانب سے جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹریفک پولیس نے قوانین کی خلاف ورزی کرنے پرڈرائیورز کے چالان کاٹے جن میں سڑک پر کچرا پھینکنے والوں کی بڑی تعداد شامل ہے۔

پولیس رپورٹ کے مطابق دوران ڈرائیونگ سڑک پر کچرا پھینکنے کے قانون کی خلاف ورزی کرنے پر فی ڈرائیور 1000 درہم کا جرمانہ عائد کیا گیا جبکہ اُن کے لائسنس پر سیاہ نقطے بھی واضح کیے گئے۔

مزید پڑھیں: خبردار!! دبئی کی سڑکوں پر سگریٹ پھینکنا مہنگا پڑ سکتا ہے

عرب میڈیا کے مطابق پولیس کی جانب سے ڈرائیونگ لائسنس یا پروفائل پر سیاہ نقطوں کا مطلب قانون کی سنگین خلاف ورزیوں میں شمار کیا جاتاہے، اگر کسی ڈرائیور کو تین نقطے مل جائیں تو اُس پر ڈرائیونگ کی پابندی عائد کرتے ہوئے لائسنس ضبط کرلیا جاتا ہے۔

واضح ہے کہ متحدہ عرب امارات کی حکومت نے رواں برس شہر کو صاف ستھرا اور خوبصورت رکھنے کے لیے بڑے پیمانے پر صفائی مہم کا آغاز کیا تھا جس کے بعد یہ قانون نافذ کیا گیا تھا کہ آئندہ کوئی بھی شخص سڑک پر کچرا پھینکے گا تو اُس پر بھاری جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے متحدہ عرب (دبئی) کے محکمہ بلدیات کے شعبے ویسٹ مینجمنٹ ڈائریکٹر عبد المجید سیفی کا کہنا تھا کہ ’صفائی مہم کا آغاز ہونے کے بعد گلیوں ، کوچوں اور سڑکوں پرسگریٹ یا پھر کچرا پھینکنے پر پابندی ہوگی‘۔

یہ بھی پڑھیں: بچوں کو اگلی نشست پر بیٹھانا جرم

اُن کا کہنا تھا کہ اگر کسی بھی شخص کو خلاف ورزی کرتے ہوئے دیکھا گیا تو اُس پر 500 درہم (پاکستانی کرنسی کے حساب سے تقریبا 15 ہزار روپے) جرمانہ عائد کیا جائے گا اور اگر بار بار کسی شہری نے حکم کی خلاف ورزی کی تو اُسے سخت سزا بھی دی جائے گی۔ حکومت نے قانون میں یہ بھی شامل کیا کہ سڑک پر تھوکنا یا کسی بھی قسم کی گندگی پھیلانے پر بھی جرمانہ عائد ہوگا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں