site
stats
عالمی خبریں

شام میں فضائی حملہ، سینئر القاعدہ رہنما ابو افغان المصری ہلاک

واشنگٹن : امریکہ نے شام میں فضائی حملے میں القاعدہ کے سینئر رہنما ابو افغان المصری کی موت کی تصدیق کر دی۔

پینٹاگون کے ترجمان پیٹرکک نے پریس بریفنگ کے دوران بتایا کہ اٹھارہ نومبر کو امریکا نے شام کے صوبے ادلب کے قریب سرمادہ میں فضائی کارروائی کی، جس دوران ابوافغان المصری مارا گیا۔

پیٹرکک نے مزید بتایا کہ مصرسے تعلق رکھنے والے ابوافغان نے افغانستان میں القاعدہ میں شمولیت اختیار کی، افغان المصری جنوبی مغربی ایشیا کے دہشتگرد گروہوں سے منسلک ہونے کے ساتھ امریکی اور اتحادی افواج اور مغرب میں دہشت گرد حملوں کی منصوبہ بندی میں ملوث تھا، جنہوں نے افغانستان میں امریکی اوراتحادی افواج سمیت مغرب کو نشانہ بنایا۔

مصر سے تعلق رکھنے والے ابو افغان کا شمار القاعدہ کے اہم رہنماؤں میں ہوتا تھا۔

دوسری جانب شام کی صورتحال پر نظر رکھنے والوں کا کہنا ہے کہ جنگ کے شکار شہر حلب کے قریب روس کی حمایت یافتہ شامی فورسز اور ان کی شیعہ حزب اللہ اتحادی نے باغیوں کے زیر تسلط علاقوں میں پیش قدمی کی ہے۔


مزید پڑھیں : افغانستان: 2ڈرون حملے، القاعدہ کے 2اہم کمانڈر ہلاک


یاد رہے گزشتہ ماہ افغانستان میں امریکی ڈرون حملے میں القاعدہ کے دو رہنما امیر فاروق القحطانی اور ان کے نائب بلال المتعبی مارے گئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top