The news is by your side.

Advertisement

عرب مہاجرین کی یہود دشمنی ملک کا امن تباہ کردے گی، اینجیلا مرکل

برلن : جرمن چانسلر اینجیلا مرکل نے یہودی مخالف اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جرمنی میں مقیم عرب پناہ گرینوں یہودی دشمنی ملک کا امن تباہ کردے گی۔

تفصیلات کے مطابق جرمنی کی چانسلر اینجیلا مرکل نے جرمنی میں پناہ گرین مہاجرین کی جانب سے یہودیت مخالف اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’عرب ملکوں سے آئے ہوئے مہاجرین کی یہودی دشمنی جرمنی کے کے لیے نئی مشکل کی صورت میں سامنے آئی ہے۔‘

جرمن چانسلر کا کہنا تھا کہ جرمنی میں بڑھتی ہوئی یہودیوں کی مخالفت کی روک تھام کے لیے حکومت نے ایک کمشنر تعینات کردیا ہے۔ ’حالات ایسے ہوگئے ہیں کہ یہودیوں کی عبادگاہیں، اسکول، نرسری سب کے لیے سیکیورٹی گارڈز رکھنا ضروری ہوگیا ہے‘۔

اینجیلا مرکل کا کہا ہے کہ ماضی پیش آنے والے ہولوکاسٹ کے واقعے کے تناظر میں جرمنی اسرائیل کی سیکیورٹی اور سلامتی کو یقینی بنانے کا ذمہ دار ہے۔ البتہ جرمن سفارت خانے کو تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے کا کوئی امکان نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مشرق وسطیٰ میں فلسطین اور اسرائیل کے درمیان تنازعے کا حل صرف اور صرف دو ریاستی نظریہ ہے، یروشلم کا مسئلہ بھی دو ریاستی نظریئے کے ذریعے ہی حل ہوسکتا ہے۔

جرمن چانسلر کا یہ مؤقف گذشتہ دنوں برلن میں ایک عربی شخص کی جانب سے دوجوانوں پر تشدد کے بعد سامنے آیا ہے، جس میں ایک عرب نے کِپّہ(یہودی ٹوپی) پہنے ہوئے نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔

جرمنی کے خبر رساں اداروں کے مطابق نوجوانوں پر حملہ کرنے والا عرب شامی پناہ گزین تھا جو مہاجرین کیمپ میں رہائش پذیر تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں