جرمن حکومت سینیگال کے 3سو دیہات میں بجلی فراہم کرے گی، اینجیلا مرکل Anjela Markle
The news is by your side.

Advertisement

جرمن حکومت سینیگال کے 300 دیہات میں بجلی فراہم کرے گی، اینجیلا مرکل

برلن/ڈاکر :  جرمن چانسلر نے سینیگال کے صدر سے ماکیسال سے ملاقات کے بعد 300 دیہاتوں میں بجلی فراہمی اور  مہاجرت کو روکنے کے لیے سینیگال میں سرمایہ کاری کرنے کا اعلان کیا۔

تفصیلات کے مطابق جرمنی کے چانسلر اینجیلا نے براعظم افریقہ کے دورے کا آغاز کرتے ہوئے کہ بدھ کے روز مغربی افریقہ کے ملک سینیگال پہنچی جہاں انہوں نے صدر ماکیسال سے ملاقات کے دوران کہا کہ دونوں ممالک کے حکمرانوں کو انسانی اسمگلنگ میں ملوث افراد کے لیے معاون نہیں بننا چاہیئے۔

اینجیلا میرکل کا دورہ سینیگال کے موقع پر کہنا تھا کہ جرمنی اور افریقی ممالک کو مشترکہ طور پر قانونی خلاف ورزیوں کے خلاف جنگ کرنی ہوگی اور افریقہ میں ملازمت کے بہتر مواقع پیدا کرنے ہوں گے تاکہ عوام ہجرت کرنے سے گریز کریں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ براعظم افریقہ میں معاشی مسائل، غربت اور دیگر تنازعات کے باعث افریقی ممالک کے شہری دیگر ممالک میں ہجرت کرنے پر مجبور ہیں، افریقہ سے ہجرت کرنے والے مہاجرین کی بڑی تعداد بہتر مستقبل کے لیے یورپی ممالک کا رخ کرتے ہیں۔

جرمن میڈیا کا کہنا ہے کہ یورپی یونین کوشش کررہی ہے کہ غیر قانونی مہاجرت کے وجوہات کو جان ان کا سدباب کیا جائے تاکہ لوگ اپنے اپنی گھروں کو چھوڑ کر ہجرت کرنا بند کریں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ جرمن چانسلر نے پاکیسال سےملاقات کے بعد اعلان کیا کہ جرمنی سینیگال کے 300 دیہاتوں میں بجلی کی فراہمی کو یقینی بنائے گا۔

سینیگال کے صدر ماکیسال کا جرمن چانسلر سے ملاقات کے دوران کہنا تھا کہ ’میں اس بات سے متفق ہوں کہ لوگ بہتر زندگی کے حصول کے لیے سمندر کے خطرناک راستے کے ذریعے یورپ کا سفر اختیار کرتے ہیں جو ’افریقہ کی عظمت کے منافی ہے‘۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق صدر ماکیسال کا کہنا تھا کہ ’مغربی افریقی ملک سینیگال میں حالات دیگر ممالک کی نسبت بہت بہتر ہیں اور یہاں کسی کو مذہبی یا نسلی تعصب کی بنیاد پر ظلم و ستم کا نشانہ بھی نہیں بنایا جاتا، اس لیے یورپی ممالک کو چاہیئے کہ سینیگال کے باسیوں کی جانب سے دی جانے والے پناہ کی درخواست کو رد کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں