The news is by your side.

Advertisement

بی اے پی کے ایک اور رکن کا حکومت میں واپسی کا امکان

حکومت نے دعویٰ کیا ہے کہ اپوزیشن اتحاد میں شامل ہونے پر بلوچستان عوامی پارٹی میں پھوٹ پڑگئی ہے اور بی اے پی کے ایک اور رکن نے حکومت سے رابطہ کیا ہے۔

بلوچستان عوامی پارٹی کا حکومت سے علیحدگی اور وزیراعظم کیخلاف تحریک عدم اعتماد میں اپوزیشن کا ساتھ دینے کے فیصلے کے بعد بی اے پی میں پھوٹ پڑ گئی ہے۔

بی اے پی سے تعلق رکھنے والی زبیدہ جلال کے بعد ایک اور پارٹی رکن کے حکومت میں واپسی کا امکان ہے۔

حکومت کے ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ بی اے پی کے ایک اور رکن نے حکومت سے رابطہ کیا ہے اور وہ اپوزیشن کا حصہ بننے کے بجائے حکومت کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ مذکورہ ممبر عدم اعتماد پر ووٹنگ سے قبل ہی حکومتی کیمپ جوائن کرلیں گے اور اس حوالے سے کسی بھی وقت فیصلہ متوقع ہے۔

واضح رہے کہ بی اے پی ارکان نے گزشتہ رات ہی اپوزیشن اتحاد میں شامل ہونے کا اعلان کیا تھا تاہم زبیدہ جلال جن کا تعلق بی اے پی سے ہی ہے نے پہلے ہی اپوزیشن کا ساتھ دینے سے انکار کردیا تھا۔

مزید پڑھیں: عدم اعتماد: بی اے پی کا اپوزیشن کی حمایت کا اعلان

ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ حکومت کے گیارہ اپوزیشن اراکین سے بھی رابطے ہیں ان میں سے کچھ سے حکومت کے براہ راست اور کچھ کے ق لیگ سے رابطے ہیں اور انہیں بھی حکومتی اتحاد میں لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس حوالے سے بھی جلد کوئی اعلان متوقع ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں