The news is by your side.

Advertisement

آرمینیا میں فوجی بغاوت کا خطرہ، وزیراعظم سے استعفیٰ طلب

یرییوان : آرمینیا میں فوج اور حکومت آمنے سامنے آگئی ہے، فوج نے وزیراعظم سے استفعی مانگ لیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق آرمینیا کی مسلح افواج نے وزیر اعظم نکول پشینان اور ان کی حکومت سے استعفی دینے کا مطالبہ کردیا ہے، وزیراعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبے کی بڑی وجہ ناگورنو-کاراباخ تنازعہ ہے، فوج کا الزام ہے کہ انہوں نے ملکی سالمتی کے معاملے پر ٹھوس موقف نہیں اپنایا۔

دوسری جانب وزیراعظم آرمینیا نے اپنے بیان میں کہا کہ آرمینیا میں فوجی بغاوت کی کوشش مسترد کرتے ہیں، فوج سے کشیدہ حالات کے باعث آرمینیا کے وزیراعظم نے چیف آف جنرل اسٹاف کونکال دیا ہے۔

چار روز قبل ملک بھر میں وزیر اعظم نکول پشینان کے خلاف ہزاروں افراد نے ریلی نکالی تھی اور ان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  ’باز آجاؤ‘ : ترک صدر کی آرمینیائی فوج کو وارننگ

ان مظاہروں کی ابتداء گذشتہ سال نومبر میں ہمسایہ ملک آذربائیجان کے ساتھ جنگ ​بندی پر دستخط کرنے کے بعد شروع ہوئی تھی جس میں آرمینیائی مقبوضہ علاقے پر قبضہ کرلیا تھا۔

اس معاہدے سے علیحدگی پسند ناگورنو کاراباخ کے خلاف چھ ہفتوں کے خونی تنازع کا خاتمہ ہوا، لڑائی کے دوران 4،700 سے زیادہ افراد مارے گئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں