The news is by your side.

مارکیٹ میں پیسہ لگائیں، ڈالر خرید کر پیسہ برباد نہ کریں: اسد عمر

کراچی: وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ دنیا کھربوں ڈالر کی مارکیٹ ہے، پاکستان کی صرف 300 ارب کی معیشت ہے۔ مارکیٹ میں پیسہ لگائیں، ڈالر خرید کر پیسہ برباد نہ کریں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں منعقدہ تقریب سے وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے بذریعہ ویڈیو لنک خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنے قوانین بدلنے ہوں گے، عالمی مارکیٹ کا حصہ بننا پڑے گا ورنہ جنوبی کوریا کی طرح تنہا ہوجائیں گے۔

اسد عمر نے کہا کہ معیشت کی مشکلات کا اندازہ ہے، معاشی بہتری کے لیے عملی اقدامات کی ضرورت ہے۔ امید ہے سیکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) ریگولیشنز کو بہتر بنائے گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معیشت کا حجم بہت کم ہے، تبدیلی کو عام طور پر پسند نہیں کیا جاتا ہے اور اس سے تباہی بھی ہوتی ہے تاہم دنیا کے نظام کے ساتھ چلنا چاہتے ہیں، تبدیلی کو مرحلہ وار متعارف کروانا چاہیئے۔ افواہیں پھیلانا چھوڑ دیں لوگ پریشان ہوجاتے ہیں۔ آئی ایم ایف سے مذاکرات میں ایکسچینج ریٹ پر بات نہیں ہوئی۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ روپے کو اوور ویلیو رکھا گیا جس سے معیشت کو نقصان ہوا، اسٹیٹ بینک کہہ چکا ہے روپے کی قدر کا توازن برقرار ہے۔ دنیا کھربوں ڈالر کی مارکیٹ ہے، پاکستان کی صرف 300 ارب کی معیشت ہے۔ پاکستانی کمپنیز صرف ڈومیسٹک ضروریات پوری کرتی ہیں۔

وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ سرکاری سوچ سے نکلنا ہے، دنیا کے نظام سے الگ چلے تو نقصان ہوگا۔ حکومت نے مشکل فیصلے کیے، مارکیٹ میں پیسہ لگائیں، ڈالر خرید کر پیسہ برباد نہ کریں۔ انٹر لوپ کے شیئرز خریدیں اور مارکیٹ میں پیسہ لگائیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں