The news is by your side.

Advertisement

افغان صدر کا عیدالفطر پر طالبان کے ساتھ جنگ بندی کا اعلان

کابل: افغانستان کی حکومت نے عیدالفطر پر طالبان کے ساتھ جنگ بندی کا اعلان کردیا، تاہم داعش کے خلاف کارروائی جاری رہے گی۔

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ 27ویں روزے سے عید کی تعطیلات تک جنگ بندی جاری رہے گی۔

افغان صدر نے کہا کہ یہ جنگ بندی صرف طالبان کے ساتھ ہوگی اور افغان سیکیورٹی فورسز داعش اور دیگر غیر ملکی شدت پسند تنظیموں کے خلاف آپریشن بند نہیں کریں گی، افغان صدر کے مطابق جنگ بندی کا فیصلہ افغان علماء کے تاریخی فتوے کی روشنی میں کیا گیا۔

افغان حکومت نے عید پر پانچ دن کی چھٹیوں کا اعلان کیا ہے اگر دونوں فریقوں نے جنگ بندی پر عملدرآمد کیا تو یہ سیز فائر 12 سے 19 جون تک جاری رہ سکتا ہے۔

دوسری جانب طالبان نے افغان حکومت کی اس پیشکش کا تاحال کوئی جواب نہیں دیا ہے، طالبان کے ترجمان نے کہا ہے کہ ہم اس حوالے سے اپنے عہدیدار سے پوچھ کر جواب دیں گے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل افغانستان میں حکومت کے خلاف جنگ کو حرام قرار دینے والے افغان علماء کے اجلاس میں دھماکہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں 14 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

دھماکے سے کچھ دیر قبل 2 ہزار سے زائد علمائے کرام نے اس اہم اجلاس میں افغانستان میں حکومت کے خلاف جاری جنگ کو غیر شرعی اور غیرآئینی قرار دیتے ہوئے حکومت کے خلاف ہتھیار اُٹھانے والوں کو شرپسند قرار دیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں