آسیہ بی بی کی رہائی ، مکمل عدالتی فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

آسیہ بی بی کی رہائی ، مکمل عدالتی فیصلہ

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے آج مسیحی خاتون آسیہ بی بی کی سزائے موت کالعدم قرار دیتے ہوئے انہیں بری کردیا، 57 صفحات پر مشتمل فیصلے میں عدالتِ عظمیٰ کی جانب سے اس مقدمے کے تمام فیصلوں پر تفصیل سے روشنی ڈالی گئی ہے۔

سپریم کورٹ آف پاکستان کی ویب سائٹ پر شائع ہونے والے مفصل فیصلے میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ آسیہ بی بی کسی اور مقدمے میں گرفتار نہیں ہیں تو انہیں رہا کردیا جائے۔

فیصلے کی ابتدا میں توہینِ رسالت کے قانون کے تمام تر پہلو اور اس کی شرعی ضرورت قرآن و احادیث کے حوالے سے ثابت کی گئی ہے، اس کے بعد بتایا گیا ہے کہ اس معاملے میں الزام کی صحت ثابت ہونا کس قدر ضروری ہے۔

یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ماضی کی عدالتوں نے کن بنیادوں پر آسیہ بی بی کو مجرم قرار دیا اور سپریم کورٹ نے ان فیصلوں میں کیا سقم پایا۔

فیصلے کے اختتام پر رسول اللہ ﷺ کی حدیث لکھی گئی ہے جس میں آنحضرت ﷺ نے امتِ مسلمہ کو مخاطب کرکے کہا ہے کہ

جان لو! جوکوئی بھی کسی غیر مسلم یا اقلیت پر ظلم کرے گا، سختی سے پیش آئے ، ان کے حقوق سلب کرے گا، اور کو ان کی برداشت سے زیادہ ایذا دے گا اور ان کی مرضی کے برخلاف ان سے کچھ چھینے گا، میں (حضرت محمد ﷺ) اس کے بارے میں روزِ قیامت شکایت کروں گا‘‘۔
ابو داؤد

Card

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں