The news is by your side.

Advertisement

آئینہ ان کو دکھایا تو برا مان گئے، آصفہ بھٹو کو غصہ کیوں آیا؟

کراچی : سابق صدر آصف زرداری کی صاحبزادی آصفہ بھٹو نے لاڑکانہ میں کتے کے کاٹے کی خبر چلانے پر میڈیا اور اے آر وائی نیوز پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا میڈیا کو میرے متعلق جھوٹ بولنے سے پہلے ثبوت دینا چاہیئے، کتے کے کاٹے کی ویکسین نہ بنانے پر وفاقی حکومت سے پوچھا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدر آصف زرداری کی صاحبزادی آصفہ بھٹو زرداری کو کتے کے کاٹنے سے زندگی اورموت کی کشمکش میں مبتلا لاڑکانہ کے حسنین کا خیال نہ آیا اور اے آر وائی نیوز پر تنقید کر ڈالی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر آصفہ بھٹو نے میڈیا اور اے آر وائی نیوز پر غصے کا اظہار کیا اور کہا اے آروائی نیوز کو کے پی اور پنجاب میں مسائل نظر نہیں  آتے، پولیو، ایچ آئی وی کے بڑھتے کیسز چھپانے پر کچھ نہیں کہا جارہا، ڈاکٹرز پر تشدد، زیادتی کے مجرم کو کے پی میں نوکری دی گئی۔

آصفہ بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ میڈیا کو میرے متعلق جھوٹ بولنے سے پہلے ثبوت دینا چاہیے، کہانیاں بنا کر خاص طور پر مجھے ٹارگٹ کیا جارہا ہے ، مجھے نشانہ بنانے کے بجائے وفاقی حکومت سے پوچھیں اور سوال کریں کتے کے کاٹے کی ویکسین کیوں فراہم نہیں کی جارہی؟

خیال رہے گزشتہ روزحسنین پرآوارہ کتوں نےحملہ کرکےچہرےکوبری طرح مسخ کردیاتھا ، لاڑکانہ میں سگ گزیدگی کے ہولناک واقعہ پراپوزیشن رہنماپرپھٹ پڑے اور وزیراعلٰی اور وزیر صحت سے مستعفٰی ہونے کا مطالبہ کردیا ہے۔

کتے کے کاٹنے سے متاثرہ  حسینن کراچی میں این آئی سی ایچ اسپتال کےآئی سی یو میں زیرعلاج ہے  اور اس کی  حالت بدستور تشویشناک ہے ،قومی ادارہ صحت اطفال کے سربراہ ڈاکٹر جمال رضا کے مطابق میڈیکل بورڈ تشکیل دے دیا گیاہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں