The news is by your side.

Advertisement

شوہر نے عائشہ سے آخری بار فون پر کیا کہا؟ سننے والوں کی آنکھیں نم

گجرات : عائشہ خود کشی کے مقدمے کی پولیس تحقیقات میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے۔25 فروری کو ندی میں کود کر خود کشی کرنے والی عائشہ کے شوہر عارف خان کے موبائل فون کی ریکارڈنگ مل گئی۔

گجرات میں احمد آباد کی 23سالہ عائشہ خودکشی کے مقدمے میں پولیس کی تحقیقات میں تیزی آگئی ۔ عائشہ کی خودکشی سے پہلے اپنے شوہر عارف خان سے فون پر بات ہوئی تھی، پولیس کو اس کال کی ریکارڈنگ مل گئی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس کال ریکارڈنگ سے مزید انکشافات ہوسکتے ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق72منٹ کی اس گفتگو میں عارف خان  نے عائشہ سے کہا تھا کہ “مرنا ہے تو مرجا اور مجھے ویڈیو بھیج دینا”۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عائشہ کو خود کشی کرنے پر مجبور کرنے والا اس کا شوہر عارف ہی تھا جو عائشہ کے مرنے  کی خبر سنے کے بعد ہی گھر سے فرار ہوگیا  تھا۔

عارف کے موبائل فون سے ملنے والی کال ریکارڈنگ میں عائشہ کے والدین نے جو الزامات عارف کے گھر والوں پر  عائد کیے تھے وہ بھی سامنے آگئے ہیں جس سے عارف نے جو مظالم عائشہ پر ڈھائے تھے اس کا بھی اب پردہ فاش ہونے والا ہے۔

بعد ازاں یکم مارچ کی رات احمدآباد پولیس نے راجستھان کے علاقے پالی سے عارف کو گرفتار کیااور 3 مارچ کو احمدآباد کی عدالت میں پیش کیا جس پر عدالت نے ملزم کو 3 روز پولیس کی تحویل میں رکھنے کا حکم سنایا تھا۔

دوسری جانب عائشہ کے وکیل ظفر پٹھان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے چونکا دینے والے انکشافات کیے ہیں۔
وکیل نے عارف پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ عارف خان کے راجستھان کی ایک لڑکی سے تعلقات ہیں۔

وکیل کا کہنا ہے کہ عارف خان اپنی بیوی عائشہ کے سامنے ویڈیو کال پر گرل فرینڈ سے بات کیا کرتا تھا، وہ اس  پر کافی پیسہ خرچ کیاکرتا تھا اور اسی وجہ سے وہ عائشہ کے والد سے رقم بھی مانگتا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں