ملک جادو سے نہیں چلتا، دھرنے اورحکومت کرنے میں بہت فرق ہوتا ہے، بلاول بھٹو -
The news is by your side.

Advertisement

ملک جادو سے نہیں چلتا، دھرنے اورحکومت کرنے میں بہت فرق ہوتا ہے، بلاول بھٹو

اسلام آباد : پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ملکی معیشت چندے، سیاست، گالی اور نہ ہی ملک جادو سے چل سکتا ہے، دھرنا دینے اور حکومت کرنے میں بہت فرق ہوتاہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے قومی اسمبلی کےاجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، بلاول بھٹو زرداری نے موجودہ حکومت کی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سو دن کا پلان دیا تھا مگر بجٹ میں کہیں نظر نہیں آیا۔

ضمنی بجٹ میں حکومت کا سو روزہ ترقیاتی پلان کہاں ہے؟ نئے پاکستان کے خواب دکھا کر پرانا بجٹ پیش کیا گیا، نئے پاکستان کے نئے بجٹ سے بہت سی امیدیں تھی، بجٹ پیش کرنا کسی بھی حکومت کے لیے آسان نہیں۔

بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ غریب کسان پس رہا ہے مگر بجٹ میں کچھ نہیں رکھا گیا، گیس اور بجلی کی قیمتوں کو بڑھا دیا گیا صرف غریب متاثر ہوا، بجٹ میں حکومت کے اپنوں وعدوں سے متعلق ایک لائن بھی نہیں، ملکی معیشت چندے، سیاست گالی اورملک جادو سےنہیں چل سکتا۔

چیئرمین پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ دھرنا دینے اور حکومت کرنے میں بہت فرق ہوتاہے، یہ پارلیمان ہے کنٹینر نہیں، آپ نے سنجیدہ سیاست کرنی ہے، سنجیدہ پالیسی میکنگ کرنی ہے، مشکل فیصلے لینے اور ان پر قائم بھی رہنا ہے۔

ہم ایک کروڑ نوکریاں اور50لاکھ گھر چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جب سے وزارت ملی ہے جنوبی پنجاب والے نے نئے صوبے کا نام تک نہ لیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں