The news is by your side.

Advertisement

جھریاں‌ ختم کروانے کا شوق خاتون کو مہنگا پڑ‌گیا

بیجنگ: چین کے شہر ہونگ ژہو میں 29 سالہ خاتون کو چہرے کی جھریاں ختم کروانا مہنگا پڑ گیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق چین کےشہر ہونگ ژہو سے تعلق رکھنے والی 29 سالہ خاتون ژہاؤ نے کاسمیٹک کلینک سے چہرے کی جھریوں کو ماند کرنے کے لیے ’رنکل فلرز‘ لگوائے جس کے بعد ان کا منہ ٹیڑھا ہوگیا۔

رپورٹ کے مطابق خاتون نے مقامی کاسمیٹکس اسپتال سے چہرے پر جھریاں ختم کرنے والے فلرز انجیکشن لگوائے تھے جس کو لگوانے کے ایک ہفتے بعد خاتون جب صبح سو کر اٹھیں تو ان کا آدھا منہ مفلوج ہوچکا تھا۔

خاتون آدھا چہرہ مفلوج ہونے کے سبب منہ اور بائیں آنکھ ٹھیک سے بند بھی نہیں کرپارہی ہیں جبکہ انہیں پانی پینے اور کھانا تک چبانے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

خاتون کا کہنا ہے کہ روزانہ جب میں اپنے چہرے کو اس حالت میں آئینے میں دیکھتی ہوں تو میرا خودکشی کرنے کا دل کرتا ہے۔

ڈاکٹرز کے مطابق خاتون ژہاؤ کو فیشنل نیرو پیرالیسس ہوا ہے اور ان کا منہ واپس پہلے کی طرح کب ہوگا اس حوالے سے کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا، اسے ٹھیک ہونے میں کئی دن، ماہ یا سال لگ سکتے ہیں جبکہ ایسا بھی ہوسکتا ہے کہ ان کا منہ کبھی ٹھیک نہ ہوسکے۔

رپورٹ کے مطابق خاتون نے اسپتال کے خلاف مقدمہ دائر کردیا ہے اور اس معاملے کا فیصلہ اب عدالت میں ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں