برطانیہ میں بے نامی جائیداد کا قانون تبدیل کرانے کی کوشش ناکام
The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ میں بے نامی جائیداد کا قانون تبدیل کرانے کی کوشش ناکام

لندن : برطانیہ میں بے نامی جائیداد کا قانون تبدیل کرانےکی کوشش ناکام ہوگئی، برطانوی حکومت نے پوری تیاری سے لڑ کر مقدمہ جیت لیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ میں بے نامی جائیداد سے متعلق قانون چیلنج کرنے والوں کو شکست کا سامنا کرنا پڑا، برطانوی حکومت نے عدالت میں بے نامی جائیداد کے قانون کے خلاف دائر مقدمہ جیت لیا۔

برطانیہ کی قومی انسداد جرائم ایجنسی نے عدالت میں قانون کا بھرپور دفاع کیا، جس کے بعد عدالت نے غیر یورپی سیاسی شخصیت کی قانون میں تبدیلی کی درخواست رد کردی۔

یاد رہے 22ملین پاؤنڈکی جائیداد بچانے کیلئے نئے قانون کوعدالت میں چیلنج کیا گیا تھا۔

رواں سال فروری میں  برطانیہ میں غیرقانونی دولت سے بنائی گئی جائیداد کا نیا قانون لاگو کیا گیا تھا ، اس اقدام کا مقصد برطانیہ منتقل کی گئی دولت کی شفافیت میں موجود سقم دور کرنا ہے، نئےقانون کے بعد ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے5متنازع جائیدادوں کی چھان بین کیلئے کہا  تھا۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے برطانیہ کو پانچ شخصیات اور اداروں کی جائیدادکی فہرست دی تھی، جس میں نوازشریف کی جائیداد بھی شامل تھیں۔

مزید پڑھیں : برطانیہ میں شریف خاندان کی مشتبہ جائیداد نئے قانون کی زد میں

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی جانب سے مراسلے میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ ایوان فیلڈ جائیداد کی فوری تحقیقات کی جائیں۔

نئے برطانوی قانون کو ’’ان ایکسپلینڈ ویلتھ آرڈر‘‘ کا نام دیا گیا تھا، جس کے مطابق برطانوی ایجنسیاں کسی بھی جائیداد کی رقم کی منتقلی اور جائیداد کیلئے حاصل رقم کے بارے میں بھی چھان بین کی مجازہوں گی۔

خیال رہے برطانیہ میں غیرقانونی طریقے سے بنائی گئی جائیداد ضبط کی جاسکتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں