The news is by your side.

Advertisement

بجٹ 22 -2021: چھوٹی گاڑیاں خریدنے والے صارفین کیلئے خاص ریلیف

اسلام آباد : حکومت نے بجٹ میں 850 سی سی سے چھوٹی گاڑیوں پر ٹیکس کم کرنے کی سفارش کردی گئی  ، جس سے ممکنہ طور پر گاڑیوں کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے وفاقی بجٹ 2021-22 چھوٹی گاڑیاں سستی کرنےکی سفارش کردی گئی ، بجٹ میں 850 سی سی سے چھوٹی گاڑیوں پر ٹیکس کم کرنے جبکہ چھوٹی گاڑیوں پر سیلز ٹیکس ، ایکسائز ڈیوٹی اور ایڈیشنل کسٹمز ڈیوٹیاں کرنے کی تجویز دی گئی ہے، جس سے ممکنہ طور پر گاڑیوں کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہے۔

بجٹ میں نئےموٹرسائیکل کے برانڈز پر ٹیکس کم کرنے اور ٹریکٹرز کے نئے ماڈلزپربھی ٹیکس کم کرنے کی بھی تجویز دی گئی ہے جبکہ بجٹ میں ایکسپورٹ سیکٹر میں بھی خاصی مراعات دی جائیں گی ، سستا خام مال دستیاب ہونے سے پیداوارل اگت کم ہوجائے گی اور کم لاگت مصنوعات بننے سے ملکی برآمدات کی کھپت بڑھ جائے گی۔

یاد رہے ذرائع کا کہنا تھا کہ بجٹ میں 5سال تک پرانی گاڑیوں سےمتعلق ایمنسٹی اسکیم کی تجویزپرغور کیا جارہا ہے ، جس کے بعد پرانی موٹرکاریں ، جیپ 3سال کی بجائے 5 سال پرانی تک امپورٹ کی جا سکیں گی۔

ایف بی آرذرائع کا کہنا تھا کہ موجودہ اسکیم کےتحت 3سال پرانی موٹرکاریں امپورٹ کی جاسکتی ہیں، امپورٹ خام مال پر کسٹم ڈیوٹی ختم کرنے کی تجویزبھی زیر غور ہے۔

خیال رہے مالی سال22-2021کاوفاقی بجٹ آج پیش کیا جائےگا ، پی ٹی آئی حکومت کےتیسرےبجٹ کاحجم8400ارب روپے ہے ، نئے مالی سال کے بجٹ میں دفاع کیلئے1330ارب روپے رکھیں جائیں گے جبکہ ٹیکس وصولی کا ہدف5829ارب روپے ہوگا۔

آئندہ بجٹ میں جی ڈی پی کا ہدف 4.8فیصد رکھا گیا ہے جبکہ درآمدات کاتخمینہ 55ارب30کروڑ ڈالرلگایاگیا ہے، کرنٹ اکاؤنٹ کا ہدف 2ارب 30کروڑ ڈالر رکھنے کی تجویزہے جبکہ ترسیلات زرکاہدف31ارب30کروڑ ڈالرمقررہوسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں