The news is by your side.

Advertisement

کراچی ٹریفک حادثہ ، قاتل بس ڈرائیور اور مالک گرفتار

کراچی: ایس ایس پی ساؤتھ جاوید اکبر کا کہنا ہے کہ پولیس نے سچل کے علاقے میں کارروائی کرتے ہوئے قاتل بس ڈرائیور کو گرفتار کرلیا جس نے آج ایم اے جناح روڈ پر ننھی معصوم سکینہ پر گاڑی چڑھائی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ایم اے جناح روڑ پر آج صبح ریس لگاتی تیز رفتار بس نے موٹرسائیکل کوٹکر ما ردی جس کی زد میں آکر موٹرسائیکل پر سوار 6 سالہ بچی جان اسکول جاتے وقت ٹریفک حادثے کا نشانہ بنی اور جان کی بازی ہار گئی تھی۔

والدین کی اکلوتی اولاد سکینہ کو ٹریفک حادثے میں اس قدر چوٹیں آئیں کہ ماں کو بیٹی کی شکل نہیں دکھائی گئی، بیٹی کے انتقال پر غمزدہ ماں کی حالت غیر ہے۔

بس حادثے میں جاں بحق ہونے والی سکینہ اپنے والد کے ہمراہ اسکول جارہی تھی، حادثے کے بعد مشتعل افراد نے دو بسوں کو آگ لگادی جبکہ بس ڈرائیور اور کنڈیکٹر جائے وقوع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تھے۔

پڑھیں: کراچی میں بس کی موٹرسائیکل کو ٹکر‘ بچی جاں بحق

دوسری جانب ایس پی صدر کا کہنا تھا کہ ہنگامہ آرائی اور جلاؤ گھیراؤ کے الزام میں 11 شہریوں کو گرفتار کرکے تھانے منتقل کیا جن سے تفتیش جاری ہے۔

بس کا مالک پولیس حراست میں ہے ، فوٹو اے آر وائی

کچھ دیر قبل ضلع جنوبی کی پولیس نے سچل کے علاقے میں کارروائی کرتے ہوئے بس کے مالک محمد اعظم اور ڈرائیور (مرکزی ملزم) محمد سلیم کو گرفتار کر کے تفتیش کے لیے تھانے منتقل کردیا۔

مقدمہ درج

بعد ازاں پولیس نے حادثے کے دو مقدمات درج کیے، ایک مقدمے میں بس ڈرائیور جبکہ دوسرے مقدمے میں بس جلانے والے افراد کو نامزد کیا گیا ہے۔

بس ڈرائیور کے خلاف درج ہونے والے مقدمے میں قتل خطا سیکشن 337 ، 320 جی 34 کی جبکہ دوسری ایف آئی آر میں بسوں کے جلانے ، بلوے اور املاک کو نقصان پہنچانے کی دفعات شامل کی گئیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں