site
stats
اہم ترین

چارسدہ : شب قدر کی عدالت میں خود کش حملہ، 9 افراد جاں بحق متعدد زخمی

چارسدہ : خیبر پختونخوا میں دہشت گردی کا ایک اور واقعہ رونما ہوگیا، زور دار خود کش دھماکے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت نو افراد جاں بحق جبکہ دو لیڈی کانسٹیبل اور وکلاء سمیت تئیس افراد زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق چارسدہ کی تحصیل شب قدر میں کچہری میں زور دار بم دھماکہ ہوا،

ڈی پی او چارسدہ کا کہنا ہے کہ دھماکہ خود کش ہے، دھماکہ اس قدر شدید تھا کہ اس کی آواز دور دور تک سنی گئی، جائے وقوعہ پر پولیس موقع پر پہنچ گئیں امدادی ٹیمیں بھی روانہ کردی گئیں۔

ڈی پی او چارسدہ نے بتایا کہ شہید پولیس اہلکار گیٹ پر ڈیوٹی دے رہے تھے اور دہشت گرد کچہری کے اندر داخل ہونا چاہتے تھے۔

اُنہوں نے خود کش حملہ آور کو روکنے کی کوشش کی تو اسی دوران اس نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ کچہری میں خواتین بچے اور لوگوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔

عدالت کے باہر دھماکے کے بعد سیاہ دھویں کے بادل اٹھتے دکھائی دیئے جبکہ وہاں موجود دیگر گاڑیوں کو بھی آگ لگ گئی،

سانحے میں نو افراد جاں بحق اور چودہ سے زائد لوگ زخمی ہوگئے ، زخمیوں طبی امداد کیلئے فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کیا گیا۔ زخمیوں میں دو لیڈی پولیس کانسٹیبلز بھی شامل ہیں۔

زخمیوں میں سے متعدد افراد کی حالت تشویشناک ہے، جبکہ ذرائع کے مطابق مزید ہلاکتوں کا خدشہ ظاہر کیاجارہاہے۔

ڈی آئی جی شبقدر نے کہا ہے کہ کچہری کی سیکیورٹی کے لئے اٹھارہ پولیس اہلکار تعینات تھے، ڈی آئی جی کہنا تھا کہ خودکش حملہ آور کا ٹارگٹ کورٹ رومز تھا لیکن پولیس اہلکاروں کی بروقت کارروائی اور بہادری نے اس کو گیٹ پر ہی روک دیا۔

 ڈی پی او سہیل خالد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ خود کش حملہ آور نے دھماکے سے قبل فائرنگ بھی کی۔

ان کا کہنا تھا کہ خود کش حملہ آور کی عمر 15 سے 16 سال کے درمیان تھی،

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پاک فوج کے دستے جائے وقوعہ پر پہنچ گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top