The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ کی چینی ایپ ٹک ٹاک اور وی چیٹ پر پابندی، چین کا ردعمل آگیا

بیجنگ : چین نے امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے چینی ایپ ٹک ٹاک اور وی چیٹ کی مذمت جبرکی اندھا دھند کوشش قرار دے دی اور کہا چین کارو باری مفادات کادفا ع کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق چین نے چینی ایپ ٹک ٹاک اور وی چیٹ سے متعلق ایگزیکٹیو آرڈر پر ردعمل دیتے ہوئے چینی ایپ پر امریکا کی مذمت سیاسی طور پر اثرانداز ہونے کی کوشش قراردے دی۔

چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ امریکاکی چینی ایپ کی مذمت جبرکی اندھادھندکوشش ہے، چین کارو باری مفادات کادفا ع کرے گا۔

یاد رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹک ٹاک اور وی چیٹ کے خلاف دو ایگزیکٹو حکم نامے جاری کئے تھے، حکم ناموں میں کہا گیا تھا کہ کوئی امریکی کمپنی ٹک ٹاک اور وی چیٹ کے ساتھ کام نہیں کر سکتی۔

مزید پڑھیں : ٹرمپ نے ٹک ٹاک، وی چیٹ کے خلاف 2 حکم نامے جاری کر دیے

وائٹ ہاؤس کا کہنا تھا کہ ایگزیکٹو حکم نامے قومی سلامتی کے پیش نظر جاری کیے گئے ہیں، ٹک ٹاک، وی چیٹ اب امریکا میں ایپل اور گوگل ایپ پر دستیاب نہیں ہوں گے۔

حکم نامے میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ان موبائل ایپس کے ذریعے کارپوریٹ جاسوسی ہو رہی ہے، ٹک ٹاک سے امریکیوں کی معلومات حاصل کی جا رہی ہیں۔

حکم نامے کے مطابق امریکی سرکاری ملازمین اور کنٹریکٹرز کی معلومات حاصل کی جا رہی ہیں۔ ٹرمپ کے ایگزیکٹو حکم نامے پر 45 کے اندر عمل درآمد ہوگا۔

اس سے قبل گزشتہ ماہ صدر ٹرمپ نے ٹک ٹاک پر پابندی عائد کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم حالات سے متعلق دیکھیں گے کہ کیا ہوتا ہے، البتہ امریکا میں ٹک ٹاک کے حوالے سے بہت سارے متبادل ایپس تلاش کر رہے ہیں جس سے صارفین مستفید ہوسکتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں