The news is by your side.

Advertisement

امریکی پابندیاں نظر انداز، چینی بینک کا ایران کے ساتھ کام کرنے کا اعلان

بیجنگ: چینی بینک نے امریکی پابندیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے ایران کے ساتھ کام کرنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق چینی بینک نے اعلان کیا ہے کہ رواں سال کے آخر تک چینی کرنسی کی بنیاد پر ایران کے ساتھ بینکاری تعاون کا آغاز کیا جائے گا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے نے دعویٰ کیا ہے کہ ایران پر پابندیوں کے باوجود کئی ممالک سے جزوی طور پر ایران اپنی تجارت جاری رکھا ہوا ہے، اس سے قبل چینی بندرگاہ پر ایرانی بحری جہاز کی موجودگی کا بھی انکشاف ہوا تھا۔

چینی بینک نے امریکی پابندیوں کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے ایران کے ساتھ کام کرنے کا اعلان کیا ہے، میڈیارپورٹس کے مطابق چین کے بینک نے کہا کہ رواں برس کے آخر تک ایران میں مالیاتی لین دین کی سرگرمیوں کا باضابطہ آغاز کرے گا۔

ایران کے ایوان صنعت و تجارت کے نائب صدر پدرام سلطانی نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ چینی بینک رواں سال کے آخر تک چینی کرنسی کی بنیاد پر ایران کے ساتھ بینکاری تعاون کا آغاز کرے گا۔

چینی بینک کا کہنا تھا کہ وہ ایران کے ساتھ مالیاتی لین دین میں مصنوعات، مخصوص افراد، ٹرانسپورٹیشن کمپنیوں اور بینکوں سے متعلق امور میں ایران کے ساتھ کام کرے گا۔

جنگ اور بات چیت کا کوئی باہمی میل نہیں، ایران کا امریکا کو جواب

دوسری جانب ایران نے چین کے خلاف امریکا کی تجارتی جنگ کی مذمت کرتے ہوئے اسے ایک قسم کی اقتصادی دہشت گردی قرار دیا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ چین اور امریکا کے درمیان موجودہ تجارتی جنگ، دونوں ملکوں کے دو طرفہ تعلقات کی سطح سے بھی اوپر پہنچ سکتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں