The news is by your side.

Advertisement

چین میں نایاب نسل کے آخری مادہ کچھوے کی پراسرار موت

بیجنگ: چین اور ویتنام میں پایا جانے والا یانگتسی نسل کا کچھوا 90 سال کی عمر میں چڑیا گھر میں ہلاک ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق چینی صوبے جیانگسو کے شہر سوڑوو کے چڑیا گھر کے عہدیداروں نے اس بات کی تصدیق کی کہ نایاب نسل کا مادہ کچھوا دو دن قبل مردہ حالت میں پایا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ چڑیا گھر انتظامیہ کے مطابق مادہ کچھوے کی ہلاکت سائنسدانوں کی جانب سے اس کی نسل کی مصنوعی افزائش کے تجربے کے ایک دن بعد ہوئی۔

رپورٹ میں چینی میڈیا کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ سائنسدانوں نے مرنے والے مادہ کچھوے کے ذریعے ان کے تخم کی مصنوعی افزائش کی پہلے بھی کوششیں کیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ماہرین نے مادہ کچھوے کی بیضہ دانی سے حاصل کیے گئے نمونوں کو اسی نسل کے نر کچھوے کے نمونوں سے ملاکر مصنوعی افزائش نسل کے تجربات بھی کیے۔

کنارے پر آنے والے کچھوے موت کے منہ میں

یانگتسی نسل کے کچھوے کی نسل معدوم ہونے کے قریب ہے اور دنیا میں اس قسم کے صرف 4 کچھوے ہی موجود تھے، جن میں سے ایک مادہ مر گئی ہے۔

چینی اور غیر ملکی ماہرین کچھوے کی موت کی وجہ بننے والے عوامل جاننے کے لیے تحقیق کر رہے ہیں۔ خیال رہے کہ اس نسل کے نرم خول والے بڑے کچھوے صرف چین میں ہی پائے جاتے ہیں اور ان کا مسکن یانگسی دریا اور تاہوجھیل ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں