چینی معیشت کی شرح9 سال کی کم ترین سطح پرآگئی
The news is by your side.

Advertisement

چینی معیشت کی شرح9 سال کی کم ترین سطح پرآگئی

بیجنگ : دنیا کی دوسری بڑی معشیت سست روی کا شکار ہو گئی ، چینی معیشت کی شرح نمو ستمبر کو ختم ہونے والی سہ ماہی میں سال 2009 سے اب تک کی کم ترین سطح پر آگئی۔

تفصیلات کے مطابق چینی معاشی ترقی کی شرح نو سال کی کم ترین سطح پرآگئی ، چینی حکومت کی جانب سے جاری اعداد وشمارکے مطابق رواں سال کی تیسری سہ ماہی معاشی ترقی کی شرح ساڑھ چھ فیصد رہی۔

چینی حکام کا کہنا ہے کہ حکومت جانب سے اقدامات کے باوجود معیشت میں سست روی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

چینی معشیت کے اعداد وشمار کے بعد چینی حصص بازاروں میں شدید مندی ریکارڈ کی گئی۔ تاہم حکومت اقدامات کے بعد اسٹاک مارکیٹس سنبھل گئی۔

دوسری جانب چینی معیشت میں سست روی اور طلب میں ممکنہ کمی نے خام تیل کی قیمت کو بریک لگا دئے، برینٹ خام تیل کی قیمت اسی ڈالر فی بیرل سے نیچے آگئی۔

یاد رہے گذشتہ ماہ چین کی حکومت نے ملک کی ڈیجیٹل معشیت کو مزید ترقی اور شعبہ زراعت میں اسے رائج کرنے کے لئے خاص توجہ دینے کا اعلان کیا تھام چینی حکومت کے مطابق ڈیجیٹل اکانومی کو ترقی دینے سے ملازمتوں کے زیادہ سے زیادہ مواقع پیدا ہوں گے۔

واضح رہے رواں سال جون میں امریکا نے پہلی مرتبہ چینی مصنوعات پر چونتیس بلین ڈالر کے اضافی محصولات عائد کیے تھے جس کے فوری ردعمل میں چین نے امریکی مصنوعات پر ساٹھ بلین ڈالر کے اضافی ٹیکس عائد کرنے کا اعلان کیا تھا۔

جس کے بعد امریکا اور چین کے مابین جاری تجارتی جنگ میں مزید شدت آگئی تھی اور دونوں جانب سے اضافی محصولات عائد کرنے کا سلسلہ جاری رہا۔

خیال رہے کہ امریکا دنیا کی سب سے بڑی معیشت ہے جس کے بعد دوسرے نمبر پر چین کا نام آتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں