The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس : خاتون ایک مہینے بعد اپنے گھر پہنچی تو کیا ہوا ؟ ویڈیو وائرل

بیجنگ : کورونا وائرس کے مریضوں کی خدمت پر مامور خاتون سماجی کارکن ایک ماہ بعد گھر اپنے پہنچی تو رقت انگیز مناظردیکھنے میں آئے، بچے کو روتا دیکھ کر وہاں موجود لوگوں کی آنکھیں نم ہوگئیں۔ ،

دنیا بھر میں کورونا وائرس کی تباہ کاریاں جاری ہیں اس وقت بیشتر ممالک میں کرونا وائرس نے لاکھوں افراد متاثر کیا ہوا ہے جس کے سبب اسپتالوں میں تمام عملہ اپنے کاموں میں دن رات متحرک ہے۔

تعلیمی اداروں اور شاپنگ مالز کو محدود وقت کیلئے بند کردیا گیا ہے، کچھ دفاتر ایسے ہیں کہ جہاں ملازمین کو گھر سے کام کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔

محکمہ صحت نے بھی ہوم کوارنٹائن کو کی ہدایات جاری کی ہیں لیکن پوری دنیا میں مچی اس افراتفری میں ایک محکمہ صحت ہی ایسا ہے جو پوری مستعدی کے ساتھ کام کررہا ہے۔

محکمہ صحت کے ملازمین مقررہ وقت سے زیادہ ڈیوٹی کررہے ہیں، ایسے حالات میں لوگ کئی کئی دنوں تک اسپتال میں ہی رہ رہے ہیں کیونکہ انہیں گھر جانے کا وقت نہیں مل پارہا ہے۔

اس حوالے سے کرونا متاثرین کے علاج پر مامور خاتون سماجی کارکن کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے، چین کے علاقہ ہیبئی کی رہائشی ایک ایسی ہی خاتون ایک ماہ بعد جب گھر لوٹی ماں اوربچے کی ایسی حالت ہوگئی کہ دیکھنے والے اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ جیسے ہی بچہ اپنی ماں کو دیکھتا ہے تو بھاگتا ہوا جاکر اس سے لپٹ جاتا ہے اور پھوٹ پھوٹ کرنے رونے لگتا ہے۔ بچہ کو روتا دیکھ کر ماں بھی بچے کو گلے لگا کر رونے لگتی ہے۔

بچے کی ماں نے میڈیا کو بتایا کہ وہ چین کے ہیبئی علاقہ میں ایک اسپتال میں ہیلتھ ورکر کے طور پر کام کرتی ہے اور گزشتہ 29 دنوں سے کام زیادہ ہونے کی وجہ سے مسلسل اسپتال میں ہی تھی۔

مزید پڑھیں: کرونا کے مریضوں کی خدمت پر مامور نرس کی درد ناک آپ بیتی

اس دوران اس کو ایک مرتبہ بھی گھر جانے کا موقع نہیں ملا تھا۔ اس ویڈیو کو اب تک لاکھوں لوگ دیکھ چکے ہیں۔ ایک صارف نے اس ویڈیو پر کمنٹ کرتے ہوئے لکھا کہ بچے تمہاری ماں اصل ہیرو ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں