The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں ظلم کی انتہا،دلت بچی کو زیادتی کے بعد جلادیا گیا

نئی دہلی: بھارت میں درندہ صفت افراد نے ظلم کی انتہا کرتے ہوئے نو سالہ بچی کو اجتماعی زیادتی کے بعد قتل کردیا اور لاش جلاڈالی۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق دہلی کے جنوب مغربی علاقے میں نو سالہ دلت بچی کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا گیا ، قبیح فعل کرنے والے درندوں نے ثبوت کو مٹانے کے لئے بچی کی لاش کو جلاڈالا، سفاک واقعے کے بعد بھارت میں کہرام مچ گیا اور بڑے پیمانے پر احتجاج کیا جارہا ہے۔

دلت بچی کے اہل خانہ نے الزام عائد کیا ہے کہ بچی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ، واقعے میں مقامی ہندو پجاری اور اس کے ساتھی ملوث ہیں، جنہوں نے زیادتی کے بعد بچی کو جلایا۔

دلخراش واقعے کے بعد دلتوں کی بڑی تعداد نئی دہلی کی سڑکوں پر نکل آئی اور احتجاجی مظاہرے کرتے ہوئے انصاف کا مطالبہ کیا۔

پولیس نے واقعے کے بعد چار ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے مگر ان کی شناخت کو ظاہر نہیں کیا جارہا ہے۔

دوسری جانب کانگریس رہنما راہول گاندھی ، نئی دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے متاثرہ خاندان سےاظہاریکجہتی کیا اور افسوسناک واقعے کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کیا۔

مودی حکومت کے دوسری بار برسر اقتدار آنے کے بعد بھارت میں کم ذات والے ہندو خاص طور پر دلت کو نشانا بنانے کے واقعات میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے،جس کے نتیجے میں دلت نوجوان، بچے اور بچیوں کو موت کے گھاٹ اتاراجارہا ہے۔

دلت مذہب سے تعلق رکھنے کی پاداش میں تنگ نظر ہندوؤں ان پر ایسے دردناک مظالم کرتے ہیں، جس دیکھ کر روح کانپ جاتی ہے، متواتر ایسے واقعات رونما ہونے کے باوجود مودی سرکار کوئی ایکشن نہیں لیتی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں