The news is by your side.

Advertisement

’ٹو کِل اے ماکنگ برڈ‘ کی خالق ہارپر لی آج ہی کے دن دنیا سے رخصت ہوئی تھیں

’ٹو کل اے ماکنگ برڈ‘ وہ مشہور ناول ہے جس کی مصنف ہارپر لی 55 سال تک دنیائے ادب میں اپنے اسی ناول کے سبب پہچانی جاتی رہیں اور خوب پذیرائی حاصل کی۔ 19 فروری 2016ء کو اس امریکی ناول نگار نے 89 سال کی عمر میں‌ یہ دنیا ہمیشہ کے لیے چھوڑ دی تھی۔

’ٹو کِل اے موکنگ برڈ‘ جدید ادب میں کلاسیک کا درجہ رکھتا ہے۔ اسے 1961ء میں ادب کا پلٹزر پرائز بھی ملا اور اس کے اب تک چار کروڑ سے زیادہ نسخے فروخت ہو چکے ہیں۔ ہارپر لی کے اس ناول پر فلم بنائی گئی جس نے 1962ء میں تین آسکر ایوارڈ اپنے نام کیے۔

عالمی شہرت یافتہ ہارپر لی کی زندگی اکثر لوگوں‌ کے لیے معمہ رہی ہے۔ وہ بہت کم منظرِ عام پر آئیں۔ انھیں‌ ادبی تقریبات میں‌ دیکھا گیا اور نہ ہی انھوں‌ نے ملکی یا غیر ملکی ادبی جرائد یا میڈیا پر ان کا انٹرویو پڑھا گیا۔

دل چسپ بات یہ ہے کہ اس شہرت اور بے حد پذیرائی کے باوجود پہلے کی ناول کی اشاعت کے 55 سال بعد تک ان کی کوئی کتاب سامنے نہیں‌ آئی تھی، اور پھر اپنی وفات سے ایک سال قبل انھوں نے اپنے نئے ناول ’گو سیٹ اے واچ مین‘ کی اشاعت کا اعلان کیا۔

ہارپر لی کا ناول ’ٹو کل اے ماکنگ برڈ‘ وہ تصنیف ہے جو امریکا میں‌ اسکول میں، ادب کے شعبے میں اور مسلسل ان کتابوں کی فہرست میں شامل رہی ہے جو مطالعے کے لیے لازمی سمجھی جاتی ہیں۔

ان کا پورا نام نیل ہارپر لی تھا، وہ امریکی ریاست الاباما کے شہر مونروویل میں پیدا ہوئیں۔ ان کے والد ایک اخبار کے مدیر اور پروپرائٹر تھے۔

ہارپر لی نے یونیورسٹی آف الاباما سے قانون کی تعلیم حاصل کی تھی۔ 2006ء میں انھیں ناٹرڈیم یونیورسٹی نے ڈاکٹریٹ کی اعزازی ڈگری دی جب کہ اس کے ایک سال بعد امریکا میں‌ ان کی ادبی خدمات کے اعتراف میں صدراتی ایوراڈ آف فریڈم سے نوازا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں