The news is by your side.

Advertisement

سارہ گِل پاکستان کی پہلی خواجہ سرا ڈاکٹر

کراچی: سارہ گِل نے پاکستان کی پہلی خواجہ سرا ڈاکٹر بننے کا اعزاز حاصل کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں خواجہ سرا برادری کو مختلف سرکاری شعبوں میں نوکریوں کے لیے زیر غور لائے جانے کے بعد وہ تکنیکی تعلیم کے حصول میں بھی پیش پیش رہنے لگی ہے۔

اس سلسلے میں سارہ گِل پاکستان کی پہلی خواجہ سرا بنی ہیں جنھوں نے ڈاکٹری کی تعلیم مکمل کر لی ہے، سارہ نے اپنی تعلیم جناح میڈیکل اینڈ ڈینٹل کالج سے مکمل کی، جو جامعہ کراچی سے الحاق شدہ ادارہ ہے۔

سارہ گِل نے ڈاکٹر بننے پر کہا کہ پاکستان کی پہلی خواجہ سرا ڈاکٹر بننے پر انھیں فخر محسوس ہو رہا ہے، انھوں نے کہا کہ میں اپنی کمیونٹی کی فلاح و بہبود کے لیے کام کروں گی۔

‏ نادرا کا خواجہ سرا افراد کیلیے زبردست اقدام

واضح رہے کہ جناح میڈیکل اینڈ ڈینٹل کالج کے ایم بی بی ایس کے سالانہ امتحان 2021 میں پہلی پوزیشن ایک لڑکی نے حاصل کی ہے، فاطمہ طارق نے اٹھارہ سو میں 1395 نمبر حاصل کیے۔

دوسری پوزیشن محمد لقمان نے اپنے نام کی ہے، جنھوں نے 1391 نمبر لیے، جب کہ تیسری پوزیشن عاشر احمد خان نے حاصل کی ہے، جنھوں نے 1385 نمبر لیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں