The news is by your side.

گڑیوں کی سب سے کم عمر ڈریس ڈیزائنر مہرین احسن

کراچی : شہر قائد کی ہونہار اور ہنر مند بچی مہرین احسن نے گڑیوں کا لباس بنا کر سب کو حیران کردیا، مہرین نے اب تک 250 سے زائد لباس ڈیزائن کیے ہیں۔

مہرین احسن کی عمر آٹھ سال تھی جب انہوں نے پہلی بار اپنی گڑیا کے لیے لباس ڈیزائن کیا اور اس کی وجہ یہ تھی کہ انہیں دکان سے لائی گئی گڑیا کا لباس پسند نہیں آیا تھا۔

نویں جماعت کی یہ ہونہار طالبہ مہرین احسن اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا کی مہمان بنیں اور اپنے اس کارنامے کے بارے میں ناظرین کو آگاہ کیا۔

مہرین نے بتایا کہ مجھے کبھی بھی گڑیاؤں کے وہ لباس پسند نہیں آتے تھے جو عام طور پر مارکیٹ میں دستیاب ہوتے ہیں، اس لیے میں نے خود ہی انہیں ڈیزائن کرنے کا فیصلہ کیا۔

نویں جماعت کی طالبہ کا کہنا تھا کہ مجھے نہ صرف پاکستان بلکہ بھارت سمیت مختلف ممالک سے بھی گڑیاؤں کے لباس بنانے کے آرڈرز ملتے ہیں۔

مہرین کا کہنا تھا کہ میں نے یہ کام کسی سے نہیں سیکھا بس سوئی دھاگے سے ہی گڑیوں کے کپڑے سیتی ہوں البتہ میری نانی کا اپنا بوتیک ہے جہاں سے مجھے کپڑوں کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے مل جاتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ میرا مقصد ہے کہ میں فرانس جاکر ڈریس ڈیزائننگ کا کورس کروں اس کیلئے میں نے فرنچ سیکھنا بھی شروع کردی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں