The news is by your side.

Advertisement

گھروں سے باہر نکلنے والے شہریوں کے بات چیت کرنے پر پابندی کی سفارش

پیرس: فرانس کی نیشنل اکیڈمی آف میڈیسن کے طبی ماہرین نے زیر زمین چلنے والی ٹرین میں سفر کرنے والے شہریوں کے بات چیت کرنے پر پابندی عائد کرنے کی سفارش کردی۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فرانس کی نیشنل اکیڈمی آف میڈیسن کی جانب سے جاری ہونے سفارشی بیان میں کہا گیا ہے زیر زمین چلنے والی عوامی ٹرانسپورٹ میں سفر کرنے والے مسافروں کو  بات چیت سے گریز کرنا چاہیے۔

سفارش میں کہا گیا ہے کہ عوامی ٹرانسپورٹ میں سفر کرنے والے مسافروں کو چاہیے کہ وہ دوران سفر موبائل فون پر بھی گفتگو سے گریز کریں۔ ادارے کی جانب سے بات چیت پر پابندی کی سفارش والے بیان میں بتایا گیا ہے کہ یہ اقدام کرونا کی روک تھام میں اہم ثابت ہوسکتا ہے کیونکہ گھروں سے باہر نکلنے والے شہریوں کے آپس میں بولنے یا موبائل فون پر گفتگو کرنے کی وجہ سے وائرس پھیل رہا ہے۔

مزید پڑھیں: معروف اینکر پرسن کرونا سے زندگی کی بازی ہار گئے

نیشنل اکیڈمی آف میڈیسن نے سفارش کی کہ شہری زیر زمین ٹرینوں میں ماسک پہن کر سفر کریں اور جہاں سماجی فاصلہ نہ ہو وہاں جانے سے محفوظ رہے۔

ماہرین نے کہا کہ کرونا سے محفوظ رہنے کی ایک احتیاطی تدبیر یہ بھی ہے کہ شہری دورانِ سفر آپس میں گفتگو نہ کریں اور فون پر آنے والی کالز بھی نہ سنیں کیونکہ کھلی فضا نہ ہونے کی وجہ سے وائرس پھیلنے کا خدشہ ہے۔

اکیڈمی کے ممبر پیٹرک بیریچ کا کہنا تھا کہ جس اسٹیشن  پر تین لوگ موجود ہوں وہاں بات چیت کرنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہاں انہیں کم از کم دو سینیٹی میٹر کا فاصلہ اختیار کرنا ضروری ہوگا۔ انہوں نے یہ بھی وضاحت کی کہ ہماری طرف سے اس پابندی کا مطالبہ نہیں کیا جارہا بلکہ ہم سفارش کررہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں