اتوار, مئی 26, 2024
اشتہار

ڈاکٹر بیربل کے قتل کا مقدمہ درج ، بھائی کو زخمی خاتون کے قتل میں ملوث ہونے کا شبہ

اشتہار

حیرت انگیز

کراچی : ڈاکٹر بیربل کے بھائی نے زخمی خاتون قرة العین پر قتل میں ملوث ہونے کا شبہ ظاہرکردیا جبکہ پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پولیس نے کراچی کے علاقے لیاری ایکسپریس وے گارڈن کے قریب ڈاکٹر بیربل کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا۔

گارڈن تھانے میں مقتول بیربل کے بھائی ریوو گنیانی کی مدعیت میں مقدمہ قتل اقدام قتل اور دیگر دفعات کے تحت درج کیا گیا، جس میں مقتول کے بھائی نے زخمی خاتون قرة العین پر قتل میں ملوث ہونے کا شبہ ظاہرکردیا ہے۔

- Advertisement -

بھائی نے بتایا کہ ڈاکٹر بیربل کا رام سوامی میں الخیر کلینک کے نام سے آئی کلینک تھا ، گزشتہ روز فون پر گولیاں لگنے کی اطلاع ملی تو جناح اسپتال پہنچے تو اسپتال میں لاش موجود تھی، بھائی کے سر میں دو گولیاں لگی ہوئی تھی، جس کے بعد گارڈن پولیس نے ضروری کارروائی اور پوسٹ مارٹم کے بعد لاش ہمارے حوالے کی۔

مقدمے کے متن میں کہا گیا کہ معلومات کرنے پر پتہ چلا کہ ڈاکٹر کلینک بند کر کے اپنی کار میں گھر جا رہے تھے کہ گارڈن گڈلک ہال کے قریب نامعلوم موٹرسائیکل سواروں نے ان پر فائرنگ کردی ، فائرنگ کے بعد کار آگے جاکر پاکستان کوارٹر کی دیوار سے ٹکرائی گئی۔

مقتول کے بھائی ریووگنیانی نے کہا کہ کار کے بونٹ پر بھی ایک گولی لگی کا نشان ہے جبکہ کار میں سوار ان کی اسسٹنٹ قرۃالعین کو بھی گولی لگی ہمیں شبہ ہے کہ اس قتل میں بالواسطہ یا بلاواسطہ قرۃالعین بھی ملوث ہو سکتی ہے۔

بھائی کے مطابق ڈاکٹر بیربل انتہائی مخیر تھے اور ان کی کسی سے کوئی دشمنی نہیں تھی ایف آئی آر میں واقعہ ملزمان کے خلاف قانونی کاروائی کی درخواست کی گئی ہے۔

یادرہے کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کرکےآنکھوں کوروشنی دینے والے ماہر ڈاکٹر قتل کردیا گیا تھا ، پولیس حکام نے بتایا تھا کہ ڈاکٹر بیربل کوقریب سےدوگولیاں ماری گئیں۔

حکام کے مطابق ڈاکٹر بیربل کی گاڑی پر گارڈن کی حدودمیں افطار سے پہلے اس وقت فائرنگ کی گئی جب وہ کلینک سےواپس جارہے تھے، جائے حادثہ سے نائن ایم ایم کے خول ملے جن کو فرانزک کےلیے بھیج دیا گیا ہے۔

Comments

اہم ترین

نذیر شاہ
نذیر شاہ
نذیر شاہ کراچی میں اے آر وائی نیوز کے کرائم رپورٹر ہیں

مزید خبریں