The news is by your side.

Advertisement

دبئی، تھری ڈی پرنٹر کی مدد سے عمارت تیار، ویڈیو وائرل

دبئی: متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی میں تھری ڈی پرنٹر کے ذریعے عمارت تیار کرلی گئی جس کی نقاب کشائی کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق دبئی میں تھری ڈی پرنٹر کے ذریعے 2 منزلہ عمارت تیار کی گئی ہے جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی، جسے صارفین کی جانب سے خوب سراہا جارہا ہے۔

دبئی میونسپلٹی نے بدھ کے روز یو اے ای کے علاقے وارسان میں دنیا کے سب سے بڑے تھری ڈی پرنٹ شدہ عمارت کی نقاب کشائی کی۔

دبئی کے سینئر بلدیاتی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ دو منزلہ عمارت کا رقبہ 640 مربع میٹر اور اس کی بلندی 9.5 میٹر رکھی گئی ہے۔

دبئی میونسپلٹی کے عہدیداران نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امید ہے کہ مستقبل قریب میں دبئی ایسی عمارتوں کا ایک مرکز بن جائے گا۔

میونسپلٹی عہدیدار الحاجری نے کہا کہ اس عمارت کو ایجادات کے مرکز کے طور پر استعمال کیا جائے گا، ہم نے شہر کے اندر رہنے کے لیے اس علاقے کو منتخب کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق مذکورہ عمارت کو ایک سال میں تیار کیا گیا ہے اور اس کی لاگت 8لاکھ درہم سے لے کر 1ملین درہم تک آئی ہے۔

الحاجری کا کہنا تھا کہ اب ہم تین مہینوں میں تھری ڈی پرنٹرکی مدد سے اس نوعیت کی عمارت کی تکمیل کو پہنچ سکتے ہیں، عمارت کی تیاری میں افرادی قوت روایتی عمارت میں درکار افرادی قوت سے بھی 50 فیصد کم ہے۔

یاد رہے کہ اس لائحہ عمل کا اعلان دو سال قبل 2016 میں متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور وزیراعظم شیخ محمد بن راشد المکتوم نے کیا تھا، جس پر اب باقاعدگی سے عملدرآمد شروع کردیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں