The news is by your side.

Advertisement

2018 کا انتخابی دنگل، بڑے سیاسی پہلوان آمنے سامنے ہوں گے

اسلام آباد: دو ہزار اٹھارہ کے انتخابی دنگل کے جوڑ سامنے آنے لگے، نامی گرامی سیاسی پہلوانوں نے ایک دوسرے کے خلاف زور آزمائی کے لیے کمر کس لی۔

تفصیلات کے مطابق ملک کی تاریخ بدلنے والے انتخابی دنگل کے بڑے جوڑ میں بڑے سیاسی پہلوان آمنے سامنے ہوں گے، کراچی میں پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان کا جوڑ پڑے گا شہر کی دعویدار ایم کیو ایم سے جہاں این اے 243 پر ایم کیو ایم بہادر آباد کے خالد مقبول صدیقی کا کپتان سے مقابلہ ہوگا۔

لاہور میں این اے 121 پر عمران خان اور نون لیگ کی تیز گام ایکسپریس خواجہ سعد رفیق کا آمنا سامنا ہوگا جبکہ این اے 35 بنوں پر چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا سابق وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا اکرم درانی میں ٹاکرا ہوگا۔


عام انتخابات کیلئے کاغذات نامزدگی کے اجراء اور وصولی کا آغاز


لاہور میں ہی این اے 125 پر نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز اور پی ٹی آئی کی یاسمین راشد میدان میں ہوں گی اور این اے 129 پر مسلم لیگ (ن) کے ایاز صادق اور تحریک انصاف کے علیم خان ٹکرائیں گے۔

علاوہ ازیں کراچی کے این اے 246 لیاری سے پہلی بار پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو الیکشن لڑیں گے، خیال رہے کہ حلقہ دو سو چھیالیس حلقہ بندیوں سے پہلےعزیز آباد کا حلقہ تھا۔


بیرون ملک پاکستانیوں کو عام انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی اجازت کی درخواست پر مزید دلائل طلب


واضح رہے کہ ملک میں عام انتخابات 25 جولائی کو ہونے جارہے ہیں جس کےلیے تمام پارٹیوں نے اپنی اپنی تیاریاں تیز کردی ہیں، علاوہ ازیں سیکیوٹی کے لیے سخت اقدامات کیے جارہے ہیں تاکہ انتخابات کا عمل پر امن بنایا جاسکے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں