سابق اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق اڈیالہ جیل کے افسر سے الجھ پڑے -
The news is by your side.

Advertisement

سابق اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق اڈیالہ جیل کے افسر سے الجھ پڑے

راولپنڈی: پاکستان مسلم لیگ ن کے سابقہ دورِ حکومت میں اسپیکر قومی اسمبلی رہنے والے ن لیگی رہنما ایاز صادق اڈیالہ جیل کے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ کے ساتھ الجھ پڑے۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کے سابق اسپیکر اڈیالہ جیل میں ایون فیلڈ ریفرنس کے سزا یافتہ مجرم نواز شریف سے ملاقات کے لیے آئے تھے۔

جیل میں داخلے سے قبل گاڑی کی تلاشی کے معاملے پر جیل حکام سے تو تو میں میں ہوگئی، ن لیگی رہنما نے جیل کے افسر کو دھمکیاں دے دیں۔

جیل کے دروازے پر ضابطے کے مطابق جب گاڑی کی تلاشی لی جانے لگی تو ایاز صادق نے ضد میں آ کر گاڑی کی تلاشی دینے سے انکار کر دیا۔

ن لیگی رہنما ایاز صادق نے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل کو دھمکی دیتے ہوئے کہا ’تمھیں دیکھ لوں گا۔‘ تاہم سنگین نتائج کی دھمکیوں کا جیل افسر پر کوئی اثر نہیں ہوا۔

عوام کی نمائندگی کرنے والے کو اڈیالہ جیل میں بند کردیا گیا ،پرویزرشید

قبل ازیں ایک اور ن لیگی رہنما پرویز رشید نے بھی ایون فیلڈ ریفرنس کے مجرم نواز شریف سے ملاقات کی، بعد ازاں میڈیا سے گفتگو میں اداروں پر سخت تنقید کی۔

انھوں نے کہا ’عمران خان کو نیب نے سہولیات فراہم کیں، وہ اپنے خلاف فیصلہ بھی خود لکھتے ہیں، اس سے انتخابات کی شفافیت پر سوال اٹھتے ہیں۔‘


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں