site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

والدین بچوں کے فیس بک میسنجر پر نظر رکھ سکیں گے، نئے فیچر کا اعلان

سان فرانسسکو: سماجی رابطے کی سب سے بڑی ویب سائٹ فیس بک نے بچوں کے لیے علیحدہ میسنجر متعارف کروانے کا اعلان کردیا جس کا مقصد والدین کی جانب سے بچوں پر خاص نظر رکھنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک انتظامیہ دیگر کے مقابلے میں سبقت حاصل کرنے اور صارفین کو متاثر کرنے کے لیے مختلف فیچزمتعارف کرواتی رہتی ہے۔

حال ہی میں فیس بک کی جانب سے 12 سال سے کم عمر بچوں پر نظر رکھنے کے لیے علیحدہ سے میسنجر متعارف کروانے کا اعلان کیا ہے جس کا آزمائشی فیچر فی الحال امریکا میں متعارف کراویا جائے گا۔

مزید پڑھیں: نیا فیچر: اب فیس بک سے کھانا منگوائیں

فیس بک انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس میسنجر کے متعارف کروانے کا ایک ہی مقصد ہے کہ والدین اپنے بچوں کی آسانی سے نگرانی کرسکیں اور اُن کے میسنجر پر نظر رکھیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ یہ میسنجر ایپ اینڈرائیڈ اور آئی او ایس ڈیوائسز کے لیے متعارف کروائی جائے گی جسے 6 سے 13 سال تک کی عمر کے بچے استعمال کریں گے۔

فیس بک انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ’اس میسنجر کو استعمال کرنے والے بچے والدین کی اجازت کے بغیر کسی سے چیٹ نہیں کرسکیں گے اور نہ ہی والدین کی مرضی کے بغیر کسی کو اپنی لسٹ میں ایڈ کرسکیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: آپ کی فیس بک پروفائل آپ کی شخصیت کی عکاس

منتظمین کے مطابق اس ایپ کو متعارف کروانے کا مقصد بچوں کا تحفظ ہے تاکہ وہ کسی بھی غلط فعل کی طرف گامزن نہ ہوسکیں۔

دوسری جانب امریکا کی کانگریس پارٹی نے بچوں کے لیے متعارف کروائے جانے والے فیچر کی پرائیوسی سے متعلق سوالات کھڑے کردیے ہیں، کانگریس رکن رچرڈ کا کہنا ہے کہ ہمیں اس کی پرائیوسی کے حوالے سے شک و شبہات ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2017 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top