The news is by your side.

Advertisement

تاجِ برطانیہ کا غرورخاک میں ملادینے والی فاطمہ صغرا کی برسی

لاہور: تحریک پاکستان کی نامور خاتون کارکن فاطمہ صغریٰ کو گزرے دو برس بیت گئے ، آپ 84 سال کی عمر میں لاہور میں انتقال کرگئیں تھیں۔

تحریک پاکستان کے دوران اس ملت کی بے مثال بیٹی فاطمہ صغریٰ کا کردار ناقابل فراموش ہے، فاطمہ صغریٰ تحریک پاکستان کی اُن نامور کارکنوں میں شامل تھیں، جنہوں نے زمانہ کمسنی ہی میں اس جدوجہد میں بھرپور حصہ لیا اور اپنا ایک مقام پیدا کیا۔

فاطمہ صغرا کی جوانی کی تصویر

جب تحریک پاکستان کی جدوجہد اپنے عروج پر تھی، آپ اس وقت دسویں جماعت میں زیر تعلیم تھیں، محترمہ فاطمہ صغراء نے انیس سو چھیالیس میں تحریک کے دوران لاہور سول سیکرٹریٹ سے برطانیہ کا جھنڈا یونین جیک اُتار کر اپنے دوپٹے سے بنا ہوا مسلم لیگ کا پرچم لہرایا تھا۔

اس کارنامے پر حکومت پاکستان کی جانب سے انھیں قومی اعزاز لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ اور پرائیڈ آف پرفارمنس ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔

دو سال قبل آج ہی کے دن ان کی اچانک طبعیت خراب ہوئی اور وہ اپنے خالقِ حقیقی سے جاملیں۔ ان کی تدفین لاہور کے میانی صاحب قبرستان میں کی گئی جہاں اس ملک کے کئی نامور نام آسودہ خاک ہیں۔ مرحومہ کے سوگواروں میں دو بیٹے اور دو بیٹیاں شامل ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں