The news is by your side.

Advertisement

کفیل اگر خروج نہائی لگا دے تو ایگزٹ کینسل کیا جا سکتا ہے؟

ریاض: سعودی عرب میں ملازمت کے دوران اگر کفیل خروج نہائی لگا دے تو کیا ایگزٹ کینسل کیا جا سکتا ہے؟

تفصیلات کے مطابق جوازات کے ٹوئٹر پر فائنل ایگزٹ کو کینسل کرانے کے حوالے سے ایک شخص نے دریافت کیا کہ کفیل نے میرا خروج نہائی لگا دیا ہے معلوم یہ کرنا ہے کہ میں ایگزٹ کو کینسل کرا سکتا ہوں، کیا اس کے لیے کوئی جرمانہ ادا کرنا ہوگا؟‘

جوازات کا کہنا تھا کہ جو شخص خروج نہائی ویزا حاصل کرنے کے بعد واپسی کا ارادہ ملتوی کرتا ہے، اسے چاہیے کہ وہ 60 روزہ مہلت ختم ہونے سے قبل ویزہ کینسل کرائے۔

تاہم جوازات نے وضاحت کی کہ یہ کام کفیل ہی انجام دے سکتا ہے یا اس کی جانب سے وہ شخص جسے کفیل نے سرکاری معاملات کی انجام دہی کے لیے مختار نامہ دیا ہوا ہو۔

خروج نہائی ویزے کو اگر دی گئی 60 روزہ مہلت کے دوران کینسل کر دیا جائے تو کوئی جرمانہ نہیں ہوتا، مہلت ختم ہونے کے بعد ایک ہزار ریال جرمانہ ہوتا ہے جسے ادا کرنے کے بعد ہی ویزہ کینسل ہوتا ہے۔

فائنل ایگزٹ کی 60 روزہ مہلت کے دوران اگر واپس جانے کا ارادہ ملتوی ہو جائے اور اس دوران اقامہ بھی ایکسپائر ہو تو اس صورت میں اقامہ تجدید کرانا ہوگا۔

واضح رہے کہ خروج نہائی ویزا لگانے کی کوئی فیس نہیں ہوتی تاہم فائنل ایگزٹ ویزا حاصل کرنے کے لیے لازمی ہے کہ کارکن کا اقامہ کار آمد ہو اور اس کے پاسپورٹ کی مدت 60 روز سے زائد ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں